Monday , October 23 2017
Home / شہر کی خبریں / جی ایچ ایم سی انتخابات،ووٹنگ مشینوں میں اُلٹ پھیر

جی ایچ ایم سی انتخابات،ووٹنگ مشینوں میں اُلٹ پھیر

تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کا حکومت پر الزام
حیدرآباد7فروری(یواین آئی)گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن (جی ایچ ایم سی ) انتخابات میں شرمناک شکست کا سامنا کرنے والی کانگریس نے آج الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں میں اُلٹ پھیر کا الزام لگایا ۔گاندھی بھون میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے تلنگانہ پردیش کانگریس کے ترجمان شراون اور گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کی سابق مئیربی کارتیکا ریڈی نے سوال کیا کہ تلنگانہ کی حکمران جماعت ٹی آر ایس نے ان انتخابات میں 100نشستوں پر کامیابی کا کس طرح دعوی کیا تھا؟ان انتخابات میں ٹی آر ایس کو 99نشستوں پر کامیابی حاصل ہوئی ہے ۔انہوں نے سوال کیا کہ ان انتخابات میں نوٹا آپشن کیوں نہیں دیا گیا۔ان دونوں نے جلد ہونے والے نارائن کھیڑ ضمنی انتخاب میں بھی الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں میں اُلٹ پھیر کا خدشہ ظاہر کیا اور مطالبہ کیا کہ بیالٹ پیپر کے ذریعہ انتخابات کروائے جائیں۔انہوں نے تعجب کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ کانگریس،تلگودیشم اور بی جے پی کا مضبوط کیڈر ہونے کے باوجود گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے انتخابات میں کس طرح ٹی آرایس کامیابی حاصل کرسکتی ہے ۔جی ایچ ایم سی انتخابات میں حصہ لینے والے تمام کانگریسی امیدواروں کی میٹنگ کل پارٹی ہیڈ کوارٹرز گاندھی بھون میں منعقد کی جائے گی جس میں ڈیویثرن کی سطح پر الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں میں الٹ پھیر کے مسئلہ پر امیدواروں کی رائے حاصل کی جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT