Friday , August 18 2017
Home / شہر کی خبریں / جی ایچ ایم سی انتخابات میں ٹی آر ایس کو شاندار کامیابی ملنے کا ادعا

جی ایچ ایم سی انتخابات میں ٹی آر ایس کو شاندار کامیابی ملنے کا ادعا

پارٹی قائدین و کارکنوں کو متحرک ہونے کا مشورہ ، وزیر آئی ٹی کے ٹی راما راؤ کا بیان
حیدرآباد ۔ 21 ۔ ڈسمبر (سیاست  نیوز) وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی کے ٹی راما راؤ نے دعویٰ کیا کہ گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے مجوزہ انتخابات میں ٹی آر ایس شاندار کامیابی حاصل کرے گی اور کارپوریشن پر ٹی آر ایس کا پرچم لہرائے گا۔ کے ٹی آر نے پارٹی قائدین اور کارکنوں پر زور دیا کہ وہ انتخابات کیلئے ابھی سے متحرک ہوجائیں۔ کے ٹی آر نے کہا کہ انتخابات تک کانگریس اور تلگو دیشم پارٹیوں سے کئی اہم قائدین ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کرلیں گے۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس پارٹی کا گریٹر حیدرآباد کے حدود میں عملاً صفایا ہوچکا ہے کیونکہ اس کے تمام اہم قائدین ٹی آر ایس میں شامل ہوچکے ہیں۔ کے ٹی آر آج حیدرآباد میں کانگریس پارٹی کے اہم قائدین کے ایم پرتاپ ، کے سرینواس یادو ، وی این ریڈی اور دوسروں کی پارٹی میں شمولیت کی تقریب سے خطاب کر رہے تھے ۔ کے ایم پرتاپ رنگا ریڈی ضلع کانگریس صدر کی حیثیت سے فرائز انجام دے چکے ہیں۔ کے ٹی آر نے ان قائدین کی شمولیت کا خیرمقدم کرتے ہوئے یقین ظاہر کیا کہ گریٹر اور رنگا ریڈی میں پارٹی مستحکم ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی قیادت میں تلنگانہ ترقی کی راہ پر گامزن ہے اور حکومت کی کارکردگی سے متاثر ہوکر اپوزیشن قائدین ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس اور تلگو دیشم کو گریٹر انتخابات میں امیدوار تک دستیاب نہیں ہوں گے۔ راما راؤ نے کہا کہ گزشتہ 7 برسوں کے دوران کانگریس پارٹی نے تلنگانہ کی ترقی کو نظر انداز کردیا۔ کانگریس اور تلگو دیشم حکومتوں نے کبھی بھی حیدرآباد اور تلنگانہ کے اضلاع کی ترقی اور عوامی مسائل کی یکسوئی کو ترجیح نہیں دی۔ انہوں نے کہا کہ گریٹر انتخابات میں ان پارٹیوں کے پاس ایسا کوئی کارنامہ نہیں ہے جو وہ عوام کے پاس پیش کرسکیں۔ برخلاف اس کے ٹی آر ایس نے 18 ماہ کے اقتدار میں حیدرآباد میں کئی انقلابی قدم اٹھائے اور ترقی کے نئے پراجکٹس کا آغاز کیا۔ کے ٹی آر نے کہا کہ حیدرآباد کو عالمی معیار کا شہر بنانا حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ اگر عوام کا تعاون حاصل رہا تو بہت جلد حیدرآباد دنیا کے ترقی یافتہ شہروں میں شامل ہوجائے گا۔ کے ٹی آر نے عوام سے اپیل کی کہ وہ گریٹر انتخابات میں ٹی آر ایس کی تائید کریں۔ انہوںنے بتایا کہ گریٹر حیدرآباد کے حدود میں 38 لاکھ افراد کو وظائف جاری کئے جارہے ہیں۔ ٹی آر ایس حکومت نے وظیفہ کی رقم میں اضافہ کیا ہے۔ ایس سی ، ایس ٹی اور مسلم غریب خاندانوں کی لڑکیوں کی شادی کیلئے کلیان لکشمی اور شادی مبارک اسکیمات کا آغاز کیا گیا ۔ ایس سی ہاسٹلس میں معیاری چاول کی سربراہی ٹی آر ایس حکومت کا کارنامہ ہے ۔ وزیر کمرشیل ٹیکسیس سرینواس یادو نے گریٹر انتخابات میں ٹی آر ایس کی کامیابی کو یقینی قرار دیا اور کہا کہ ترقیاتی اقدامات سے عوام کافی متاثر ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ورنگل لوک سبھا حلقہ کے نتیجہ کا تسلسل حیدرآباد میں بھی جاری رہے گا۔ حکومت کے مشیر اور سابق صدر پردیش کانگریس ڈی سرینواس نے عوام سے اپیل کی کہ گریٹر انتخابات میں ٹی آر ایس کو کامیابی سے ہمکنار کریں۔ انہوں نے کہا کہ صرف ٹی آر ایس ہی عوامی مسائل حل کرسکتی ہے ۔ انہوں نے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی جانب سے شروع کی گئی مختلف اسکیمات کی ستائش کی۔ انہوں نے  غریب عوام کیلئے ڈبل بیڈروم مکانات کی تعمیر کو تاریخی فیصلہ قرار دیا اور کہا کہ عوام سے ایک روپیہ وصول کئے بغیر ذاتی مکان تمام سہولتوں کے ساتھ حوالے کئے جائیں گے۔ حیدرآباد میں ایک لاکھ سے زائد مکانات کی تعمیر کا منصوبہ ہے۔

TOPPOPULARRECENT