Sunday , September 24 2017
Home / شہر کی خبریں / جی ایچ ایم سی انتخابات میں ٹی آر ایس کی تنہا مقابلہ آرائی

جی ایچ ایم سی انتخابات میں ٹی آر ایس کی تنہا مقابلہ آرائی

مجلس سے مفاہمت مسترد ، وزیر برقی جگدیش ریڈی کا بیان
حیدرآباد۔/3ڈسمبر، ( سیاست نیوز) وزیر برقی جگدیش ریڈی نے وضاحت کی کہ گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے انتخابات میں ٹی آر ایس تنہا مقابلہ کرے گی۔ انہوں نے میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے شہر کی مقامی سیاسی جماعت مجلس کے ساتھ کسی بھی انتخابی مفاہمت کے امکانات کو مسترد کردیا۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی اپنے طور پر انتخابات میں حصہ لے گی اور گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن پر گلابی پرچم لہرائے گا۔ جگدیش ریڈی نے کانگریس کے رکن قانون ساز کونسل ایم ایس پربھاکر اور تلگودیشم رکن اسمبلی کنٹونمنٹ جی سائینا کی آج ٹی آر ایس میں شمولیت کا خیرمقدم کیا۔ انہوں نے کہا کہ ان جماعتوں سے تعلق رکھنے والے بعض اہم قائدین بہت جلد ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کرلیں گے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے حیدرآباد کی ترقی کیلئے جو قدم اٹھائے ہیں اس سے متاثر ہوکر دیگر جماعتوں کے قائدین ٹی آر ایس کا رخ کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ورنگل کی طرح گریٹر حیدرآباد کے انتخابات میں پارٹی کو زبردست عوامی تائید حاصل ہوگی اور 80سے زائد نشستوں پر ٹی آر ایس کے امیدوار کامیابی حاصل کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ نلگنڈہ، کھمم اور محبوب نگر میں مجالس مقامی کی قانون ساز کونسل کی نشستوں پر ٹی آر ایس کی کامیابی یقینی ہے۔ انہوں نے کہا کہ قانون ساز کونسل کی 12نشستوں کی انتخابات میں ٹی آر ایس اپنے بل پر کامیابی حاصل کرنے کے موقف میں ہے اور اسے کسی جماعت کی تائید کی ضرورت نہیں۔ انہوں نے تمام 12ایم ایل سی نشستوں پر کامیابی کا دعویٰ کیا ہے۔ وزیر برقی نے کہا کہ کے سی آر حکومت نے حیدرآباد کو عالمی معیار کے شہر میں تبدیل کرنے کا تہیہ کیا ہے اور اس سلسلہ میں اقدامات شروع کئے گئے ہیں۔ سڑکوں کی توسیع اور بنیادی سہولتوں کی فراہمی کے ذریعہ حیدرآباد کو ملک بھر میں سرفہرست ترقیافتہ شہر کا درجہ دیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ حال ہی میں شہر میں پانی کے مسئلہ کی یکسوئی کیلئے کے سی آر حکومت نے گوداوری کا پانی شہر منتقل کرنے کیلئے پراجکٹ پر کامیابی سے عمل کیا ہے۔ اس طرح شہر میں پینے کے پانی کے مسئلہ کی مستقل طور پر یکسوئی کردی جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ گریٹر حیدرآباد کے عوام ٹی آر ایس حکومت کی کارکردگی سے مطمئن ہیں۔ گریٹر میں مقیم تمام طبقات کو یقین ہے کہ صرف ٹی آر ایس حکومت ہی حیدرآباد کی ترقی کو یقینی بناسکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ گریٹر حیدرآباد کے حدود میں پارٹی کو مزید مستحکم کیا جائے گا اور بلدیہ پر ٹی آر ایس کا قبضہ ہوگا۔

TOPPOPULARRECENT