Wednesday , October 18 2017
Home / شہر کی خبریں / جی ایچ ایم سی انتخابات کے لیے حکومت اور الیکشن اتھاریٹی کی کوششوں میں سرعت

جی ایچ ایم سی انتخابات کے لیے حکومت اور الیکشن اتھاریٹی کی کوششوں میں سرعت

مختلف زمروں کے حلقوں کی فہرست حکومت کو پیش ، تجاویز و ترمیم کے بعد اعلامیہ کی اجرائی
حیدرآباد ۔ 11۔ ڈسمبر (سیاست نیوز) حکومت اور الیکشن اتھاریٹی کی جانب سے جلد از جلد مجلس بلدیہ حیدرآباد کے انتخابات کی کوششیں تیز ہوتی جارہی ہیں۔ بلدی حدود میں جاری بی سی رائے دہندوں کی شناخت کا عمل مکمل کرتے ہوئے بلدی عہدیداروں نے ایس سی ، ایس ٹی ، بی سی اور خواتین کیلئے محفوظ حلقوں کی فہرست حکومت کو روانہ کردی ہے ۔ بلدی عہدیداروں کی جانب سے روانہ کردہ فہرست تجاویز ہے جس پر قطعی فیصلہ کا اختیار حکومت کو حاصل ہے۔ حکومت کی جانب سے تجاویز میں ترمیم کے ساتھ اعلامیہ کی اجرائی کے بعد اعتراضات وصول کئے جانے کی توقع ہے ۔ اعتراضات کی موصولی کے بعد قطعی اعلامیہ کی اجرائی  متوقع ہے ۔ حکومت کے ذرائع کے بموجب بلدی عہدیداروں نے جو تجاویز روانہ کی ہے ، ان تجاویز کی روانگی سے قبل بھی حکومت سے مشاورت کی جاچکی ہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ آئندہ دو یوم کے دوران حکومت کی جانب سے اس سلسلہ میں اعلامیہ کی اجرائی سے قبل ریاستی الیکشن کمیشن سے مشاورت کی جائے گی اور مذکورہ تجاویز پر الیکشن کمیشن رائے حاصل کرنے کے بعد محفوظ حلقوں کو قطعیت دینے کے متعلق فیصلہ کیا جائے گا۔ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کی جانب سے بلدی حلقوں کی از سر نو حدبندی کا عمل مکمل کئے جانے کے بعد سے بلدیہ بی سی رائے دہندوں کی نشاندہی کا عمل جاری رکھے ہوئے تھی۔ شہر حیدرآباد میں بلدی انتخابات کے انعقاد کے سلسلہ میں حکومت کی جانب سے کی جارہی کوششوں کے ساتھ ساتھ بلدی عہدیدار انتخابی تیاریوں میں مصروف دیکھے جارہے ہیں ۔ دوسری جانب عدالت میں زیر دوران مقدمات کی فی الفور یکسوئی کیلئے بھی حکومت کی جانب سے ہدایات دی جاچکی ہے اور بلدی عہدیداروں کو اس بات کا پابند بنایا گیا کہ وہ عدالتی احکامات کی خلاف ورزی کے بغیر تمام معاملات کو قانون کے دائرہ میں حل کرنے کی ممکنہ کوشش کریں۔ بی سی حلقوں کو محفوظ کئے جانے کے سلسلہ میں بھی عدالت میں اپیل دائر کی گئی ہے جس پر عدالت نے الیکشن اتھاریٹی کو جواب داخل کرنے کی ہدایت دی ہے۔

TOPPOPULARRECENT