Sunday , August 20 2017
Home / Top Stories / جی ایچ ایم سی حدود میں ترقی سے مربوط 100 یومی منصوبہ

جی ایچ ایم سی حدود میں ترقی سے مربوط 100 یومی منصوبہ

حیدرآباد۔ 18 فروری (سیاست نیوز) وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی، پنچایت راج و بلدی نظم و نسق مسٹر کے تارک راما راؤ نے 100 یومی ترقیاتی منصوبہ کا اعلان کرتے ہوئے شہریوں کو یہ یقین دہانی کرائی کہ جی ایچ ایم سی اور ایچ ایم ڈی اے حدود میں عمارتوں اور نئی تعمیرات کیلئے عاجلانہ اجازت نامہ یقینی بنایا جائے گا۔ انہوں نے آج راج بھون پہنچ کر گورنر مسٹر ای ایس ایل نرسمہن سے ملاقات کی اور حالیہ جی ایچ ایم سی انتخابات میں عوام سے کئے گئے وعدوں کو پورا کرنے کے ضمن میں عملی اقدامات سے واقف کرایا۔ انہوں نے گورنر کو بتایا کہ حکومت نے 100 یومی منصوبہ تیار کیا ہے۔ گورنر نے اس اقدام کی ستائش کی اور موثر عمل آوری کیلئے نیک توقعات کا اظہار کیا۔ بعدازاں مسٹر کے ٹی راما راؤ نے ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے 100 یومی منصوبہ میں شامل اہم نکات سے واقف کرایا۔ انہوں نے بتایا کہ جی ایچ ایم سی حدود میں وارڈس اور ایریا کمیٹیوں کا آغاز کیا جائے گا۔ مکانات و عمارتوں کی تعمیر کیلئے اجازت نامہ کا حصول پہلے کافی مشکل تھا اور دفتر کے چکر کاٹنے پڑتے تھے، لیکن اب جی ایچ ایم سی اور حیدرآباد میٹرو ڈیولپمنٹ اتھاریٹی (ایچ ایم ڈی اے) حدود میں عاجلانہ اجازت نامہ یقینی بنائے جائیں گے اور اندرون 100 یوم آن لائن منظوری کے عمل کا بھی آغاز ہوگا۔ ای۔ آفس کے ذریعہ آن لائن مانیٹیرنگ ادارہ کا قیام عمل میں لایا جائے گا۔ اس کے علاوہ جی ایچ ایم سی پورٹل تیار کیا جارہا ہے جہاں شکایات کی یکسوئی اور مشورے قبول کئے جائیں گے۔ کے ٹی آر نے کہا کہ 30 کروڑ روپئے کے مصارف سے شہر میں نالوں کا موثر طور پر تعین کیا جائے گا۔ اسی طرح ایک کروڑ روپئے کے مصارف سے 10 شمشان گھاٹ تعمیر کئے جائیں گے۔ خاتون تنظیموں کو 100 دن میں 100 کروڑ روپئے جاری کئے جائیں گے۔ 40 کروڑ روپئے کے مصارف سے 32,000 نئے نلوں کے کنکشنس کا نشانہ مقرر کیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ 20 کروڑ روپئے کے مصارف سے لے آؤٹس کیلئے باؤنڈری والس تعمیر کی جائیں گی اور ان کا تحفظ یقینی بنایا جائے گا۔ ایچ ایم ڈی اے میں مسائل پر عوام کو شکایت کیلئے ٹول فری نمبر فراہم کیا جائے گا۔ عوام میں 31 مئی تک 3.5 کروڑ پودے تقسیم کئے جائیں گے۔ 26 کروڑ روپئے کے مصارف سے 40 ماڈل مارکٹس قائم کئے جائیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ شہر حیدرآباد میں کچرے کی نکاسی کیلئے 2,500 رضا کارانہ آٹوز استفادہ کیا جائے گا۔ مسٹر کے ٹی آر نے مزید بتایا کہ شہر حیدرآباد کے مختلف مقامات پر یوتھ کلبس اور اسوسی ایشنس کے تعاون سے جمس (ورزش گاہ) قائم کی جائیں گی اور 2 جون کو  ریاست تلنگانہ کی یوم تاسیس کے موقع پر 100 یومی منصوبہ پر عمل آوری کا جائزہ لیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT