Tuesday , August 22 2017
Home / شہر کی خبریں / جی ایچ ایم سی میں خواتین کو 50 فیصد تحفظات فراہم کرنے کانگریس کو اعزاز

جی ایچ ایم سی میں خواتین کو 50 فیصد تحفظات فراہم کرنے کانگریس کو اعزاز

خواتین کو کامیاب بنانے کی اپیل، مہیلا کانگریس کا اجلاس، اتم کمار ریڈی صدر پی سی سی تلنگانہ کا خطاب
حیدرآباد /10 جنوری (سیاست نیوز) جی ایچ ایم سی میں خواتین کو 50 فیصد تحفظات فراہم کرنے کا اعزاز کانگریس کو حاصل ہے، لہذا خواتین کانگریس کو بھاری اکثریت سے کامیاب بنانے میں اہم رول ادا کریں۔ آج گاندھی بھون کے پرکاشم ہال میں منعقدہ مہیلا کانگریس کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے صدر پردیش کانگریس اتم کمار ریڈی نے یہ بات کہی۔ صدر تلنگانہ مہیلا کانگریس مسز این شاردا نے جلسہ کی صدارت کی۔ اس موقع پر صدر آل انڈیا مہیلا کانگریس مسز شوبھا روجا، سابق مرکزی وزیر ایس جے پال ریڈی، ورکنگ پریسیڈنٹ تلنگانہ پردیش کانگریس ملو بٹی وکرامارک، رکن راجیہ سبھا وی ہنمنت راؤ، سابق وزیر ڈاکٹر گیتا ریڈی، صدر تلنگانہ پردیش کانگریس اقلیتی سیل محمد خواجہ فخر الدین کے علاوہ دیگر بھی موجود تھے۔ صدر پردیش کانگریس نے کہا کہ بحیثیت صدر نشین یو پی اے سونیا گاندھی نے ملک بھر میں خواتین کو خود مختار بنانے کے لئے بڑے پیمانے پر عملی اقدامات کئے۔ گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے 150 کے منجملہ 75 بلدی حلقوں کو خواتین کے لئے محفوظ بنانے کا اعزاز بھی کانگریس کو حاصل ہے۔ انھوں نے کہا کہ کانگریس دور حکومت میں وزارت میں 6 خواتین کو شامل کیا گیا تھا، تاہم ٹی آر ایس نے خواتین کو نظرانداز کردیا۔ انھوں نے کہا کہ تلنگانہ کابینہ میں ایک بھی خاتون کو شامل نہ کرکے خواتین کی توہین کی گئی ہے، جس کی وہ سخت مذمت کرتے ہیں اور خواتین سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ جی ایچ ایم سی انتخابات میں کانگریس کو کامیاب بناکر ٹی آر ایس کو سبق سکھائیں۔ صدر آل انڈیا مہیلا کانگریس مسز شوبھا روجا نے کہا کہ تمام شعبہ حیات میں خواتین کی حوصلہ افزائی کرنے کا اعزاز کانگریس کو حاصل ہے۔ انھوں نے مہیلا کانگریس قائدین اور کارکنوں کو جی ایچ ایم سی انتخابات میں گھر گھر مہم چلاکر پارٹی کی کامیابی میں اہم رول ادا کرنے کا مشورہ دیا۔ انھوں نے کہا کہ سونیا گاندھی وعدہ کی پکی ہیں، جس کی مثال علحدہ تلنگانہ کی تشکیل ہے۔ ایس جے پال ریڈی نے کہا کہ وہ جب مرکزی وزیر تھے تو انھوں نے شہر حیدرآباد کی ترقی کے لئے بڑے پیمانے پر اقدامات کئے۔ جے این این یو آر ایم اسکیم کے تحت چار ہزار کروڑ روپئے کے مصارف نے حیدرآباد کو ترقی دینے میں اہم رول ادا کیا تھا۔ انھوں نے بتایا کہ 70 ہزار مکانات منظور کئے گئے تھے، عصری سہولتوں سے لیس آر ٹی سی بسوں کی منظوری کے علاوہ میٹرو ریل منظور کرنے کا اعزاز بھی کانگریس کو حاصل ہے۔ انھوں نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت نے سوائے کانگریس پر تنقید کرنے کے کچھ نہیں کیا اور کانگریس دور حکومت میں انجام دیئے گئے ترقیاتی کاموں پر اپنا مہر لگاکر عوام کو دھوکہ دے رہی ہے۔ مسز این شاردا نے کہا کہ کانگریس دور حکومت میں ہی خواتین کی ترقی ہوئی، ہر شعبہ حیات میں ان کے ساتھ انصاف ہوا اور ہر قدم پر ان کی حوصلہ افزائی کی گئی، جب کہ ٹی آر ایس نے خواتین کو ہر سطح پر نظرانداز کردیا۔ انھوں نے خواتین کو مشورہ دیا کہ جی ایچ ایم سی انتخابات میں حکومت کو سبق سکھانے کے لئے تیار ہو جائیں اور کانگریس کو بھاری اکثریت سے کامیاب بنائیں۔

TOPPOPULARRECENT