Sunday , September 24 2017
Home / شہر کی خبریں / جی ایچ ایم سی کی پرانی اور بوسیدہ عمارتوں کو منہدم کرنے پر توجہ مرکوز

جی ایچ ایم سی کی پرانی اور بوسیدہ عمارتوں کو منہدم کرنے پر توجہ مرکوز

حیدرآباد 4 اگست (یواین آئی )شہر حیدرآباد میں حالیہ چند دنوں کے دوران بوسیدہ اور مخدوش عمارتوں کے گر جانے اور جانی نقصانات کے واقعات کے پیش نظر گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن (جی ایچ ایم سی )نے پرانی اور بوسیدہ عمارتوں کو منہدم کرنے پر توجہ مرکوز کردی ہے ۔ اس سلسلہ میں کمشنر گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن نے کہا ہے کہ کارپوریشن کے ٹاون پلاننگ شعبہ میں پرانی مخدوش عمارتوں کی نشاندہی کی ہے جن میں سے 25سے زائد مکانات کو منہدم کردیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ انہدامی مہم کیلئے عمارتوں کے مالکین اور کرایہ داروں کے تعاون کی ضرورت ہے ۔ کیونکہ بوسیدہ عمارتوں کے بعض مالکین عمارتوں کو منہدم ہونے سے بچانے کیلئے عدالت سے رجوع ہورہے ہیں۔ جبکہ بعض افراد ان پرانی عمارتوں کے ڈھانچہ کی مضبوطی معلوم کرنے کیلئے یونیورسٹیز کے انجینئرنگ کے شعبہ کے ماہرین کی مدد حاصل کررہے ہیں۔ بعض کرایہ داروں کا ماننا ہے کہ عمارت کو منہدم کرنے پر مالک مکان انہیں دوبارہ نئی عمارت میں کرایہ دار نہیں بنائے گا اسی لئے یہ کرایہ دار بھی اعتراض کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حیدرآباد چار سو سالہ قدیم شہر ہے ۔ پرانی عمارتوں کو منہدم کرنے کی ذمہ داری صرف کارپوریشن کی نہیں ہے بلکہ اس کیلئے تمام کے تعاون کی ضرورت ہے کیونکہ یہ شہریوں کی سلامتی کا مسئلہ ہے ۔ انہو ں نے شہریوں سے اپیل کی کہ پرانی اور مخدوش عمارتوں کی اطلاع کارپوریشن کو دی جائے ۔ اس کے بعد قانون کے مطابق ان بوسیدہ عمارتوں میں رہنے والوں کو نوٹس دیتے ہوئے ایسی عمارتوں کو منہدم کردیا جائے گا۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT