Monday , August 21 2017
Home / شہر کی خبریں / جے این ٹی یو نے 903 لکچررز کو بلیک لسٹ کردیا

جے این ٹی یو نے 903 لکچررز کو بلیک لسٹ کردیا

ایک سے زائد کالج میں کام کرنے پر کارروائی ، 40 کالجس کو نوٹس
حیدرآباد ۔ 18 ۔ مئی : ( سیاست نیوز ) : جواہر لال نہرو ٹکنالوجیکل یونیورسٹی الحاق کمیٹی نے جے این ٹی یو کے ساتھ رجسٹرڈ 99 ہزار 366 فیکلٹی ممبرس میں سے 903 کو فرضی فیکلٹی ممبرس قرار دیا اور انہیں بلیک لسٹ کردیا گیا ۔ یونیورسٹی کے ویجلنس ونگ نے اس حقیقت کا پتہ چلایا کہ بیشتر فیکلٹی ممبرس ایک سے زائد کالجس میں کام کررہے تھے ، فیکلٹی ممبرس کے پیش کئے گئے آدھار کارڈس اور پیان کارڈس اور ان کی طرف سے پیش کی گئی دوسری تفصیلات کی بنیاد پر ویجلنس محکمہ کے حکام نے تحقیقات کی اور چند فیکلٹی ممبرس کی بدعنوانیاں بے نقاب ہوئی ہیں ۔ بعض کیسیس میں پتہ چلا کہ ایک فیکلٹی ممبر تقریبا دس کالجس میں کام کررہا تھا اور طلبہ کے تعلیمی مستقبل سے کھلواڑ کیا جارہا تھا ۔ لکچررس کے ایک سے زائد کالجس میں کام کرنے کا پردہ فاش کرنے کے علاوہ تحقیقات میں یہ بھی پتہ چلا کہ فیکلٹی ممبرس کے پاس درکار مستند تعلیمی لیاقت بھی نہیں ہے ۔ جے این ٹی یو کے تحت 266 انجینئرنگ اور 145 بی فارمیسی کالجس کام کررہے ہیں جہاں جملہ دس ہزار فیکلٹی ممبرس ہیں ۔ جے این ٹی یو نے چالیس انجینئرنگ اور بی فارمیسی کالجس کو نوٹسیں دی ہے کہ وہ دس دن کے اندر وضاحت کریں ۔ نوٹس کے جواب وصول ہونے پر مناسب کارروائی کی جائے گی ۔ رجسٹرار جے این ٹی یو مسٹر یادیا کے بموجب قواعد کے تحت ایک فیکلٹی ممبر کو پورے تعلیمی سال میں صرف ایک ہی کالج میں کام کرنا چاہئے ۔۔

TOPPOPULARRECENT