Friday , August 18 2017
Home / ہندوستان / جے این یو میںتشدد ‘شکاگو یونیورسٹی کا اظہار تشویش

جے این یو میںتشدد ‘شکاگو یونیورسٹی کا اظہار تشویش

طلبہ کے خلاف حکومت کی کارروائی کا جائزہ ‘ واقعات افسوسناک
نئی دہلی۔21فبروری ( سیاست ڈاٹ کام ) غداری کے الزامات پر جواہر لال نہرو یونیورسٹی کے طلبہ کی گرفتاری پر اٹھنے والے طوفان کے درمیان شکاگو یونیورسٹی کے اعلیٰ عہدیدار نے کہا کہ وہ اس طرح کے پُرتشدد واقعات کا جائزہ لے رہے ہیں لیکن حکومت اور طلبہ کے خلاف حالیہ کارروائی تشویشناک بات ہے ۔ یونویرسٹی آف شکاگو کا جواہر لال نہرو یونیورسٹی اور دہلی یونیورسٹی کے بشمول کئی ہندوستانی یونیورسٹیوں سے الحاق ہے ۔ شکاگو یونیورسٹی کے نائب صدر برائے گوبل انگیجمنٹ آین سلومن نے کہا کہ میں طلبہ میں حکومت کی جانب سے اسکولوں میں ہونے والی حالیہ تبدیلیوں کی جانچ پڑتال نہیں کررہا ہوں بلکہ آپ جانتے ہیں کہ میں جواہر لال نہرو یونیورسٹی واقعہ کا جائزہ لے رہا ہوں اور ایسے واقعات ہمارے لئے تشویش کا باعث   ہوتے ہیں ۔ جواہر لال نہرو یونیورسٹی اسٹوڈنٹ لیڈر کنہیا کمار کی گرفتاری کے بعد احتجاج شروع ہوا ہے ۔ ایسے واقعات سے یونیورسٹیوں کے اقدار کو ٹھیس پہنچتی ہے ۔ ہماری یونیورسٹی کا ہندوستان کی مختلف یونیورسٹی کے ساتھ شراکت داری ہے اور یہ اقدار پر مبنی تعاون ہے اور ہم ان معاہدات کو اہمیت دیتے ہوئے یونیورسٹیوں کے ساتھ ہماری شراکت داریکو بھی باوقار رکھنا چاہتے ہیں ۔ شکاگو یونیورسٹی میںاس وقت ہندوستان کے 400سے زائد بچے زیر تعلیم ہیں ۔ ان کے علاوہ کئی ہندوستانی شخصیتیں یونیورسٹی سے وابستہ ہیں ۔ آر بی آئی گورنر رگھورام راجن بھی یونیورسٹی کے ایک پروفیسر ہیں ۔ فی الحال وہ رخصت پر ہیں ۔ انہوں نے فینانس کے پروفیسر کی حیثیت سے خدمات انجام دی ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT