Tuesday , September 26 2017
Home / شہر کی خبریں / ج31 جولائی کو اے آئی ایس ایف کی یوم تاسیس تقریب

ج31 جولائی کو اے آئی ایس ایف کی یوم تاسیس تقریب

حکومت تلنگانہ کی تعلیمی پالیسی پر تنقید، قومی صدر اے آئی ایس ایف ولی اللہ قادری
حیدرآباد۔24جولائی(سیاست نیوز) قومی صدر آل انڈیا اسٹوڈنٹ فیڈریشن جناب سی ولی اللہ قادری نے حکومت تلنگانہ کی تعلیمی پالیسی کو اپنی شدید تنقید کانشانہ بناتے ہوئے کہاکہ ڈھائی سال کو طویل عرصہ گذرجانے کے بعد بھی تلنگانہ کے یونیورسٹیز میںچانسلر‘ وائس چانسلرس‘ راجسٹرار اور پروفیسرس کے تقررات میںکوتاہی برتی جارہی ہے جس کے سبب تلنگانہ میںاعلی تعلیمی نظام شدید طور پر متاثر ہورہا ہے۔ ولی اللہ قادری نے کہاکہ برخلاف اسکے تلنگانہ کے یونیورسٹیز میں ایس سی ‘ ایس ٹی اور مسلم طلباء کا عرصہ حیات تنگ کرن کی سازشیں کی جارہی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ایسا محسوس ہورہا ہے حکومت تلنگانہ مرکز کے خفیہ ایجنڈے پر کام کرتے ہوئے تلنگانہ میںبھگوا برگیڈ کی مکمل طور پر پشت پناہی کررہی ہے ۔ جناب سید ولی اللہ قادری نے حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی میں دلت طالب علم آنجہانی روہت ویمولہ کے مجسمہ کو توڑ نے والوں کے خلاف کاروائی سے گریز کو بھی حکومت تلنگانہ کی دوہری پالیسی کا نتیجہ قراردیا۔ روہت ویمولہ خودکشی واقعہ کے بعد تلنگانہ کی یونیورسٹیز میںمسلسل ایس سی ‘ ایس ٹی او رمسلم طلبا ء کو نشانہ بنانے کے واقعات رونماء ہورہے ہیںاور ان واقعات کی روک تھام میںحکومت تلنگانہ پوری طرح ناکام ہوگئی ہے ۔ انہو ںنے وی ایچ پی اور دوسری بھگوا تنظیموںکی جانب سے یونیورسٹی کے سیکولر طلبہ کودی جانی والی دھمکیوں پر حکومت کی عدم کاروائی کو بھی تلنگانہ میںامن کی برقراری کو سنگین خطرہ قراردیا۔ پچھلے کئے دنوں سے بھگوا برگیڈ بائیںبازو اور سیکولر طلبہ تنظیموں کو گھیرنے کی کوشش کررہا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ حکومت تلنگانہ یونیورسٹی پر توجہہ مرکوز کرنے سے قاصر دیکھائی دی رہی ہے ۔ انہو ںنے چنڈی یاگم ‘ ہریتا ہرام جیسے پروگراموں پر خرچ کی جانے والی رقم کا نصف حصہ یونیورسٹی تعلیم پر صرف کرنے کا حکومت کو مشورہ دیااور کہاکہ اس سے تلنگانہ کا تعلیمی نظام بہتر ہوسکتا ہے ۔جناب سید ولی اللہ قادری نے روہت ویمولہ کی خودکشی کے بعد شروع کی گئی طلبہ تحریک کے نتیجے میںسمرتی ایرانی کو ایچ آرڈی منسٹری سے ہٹایاگیا ہے جبکہ اپا رائو اوربنڈارودتاتریہ کے خلاف بھی کاروائی ضروری ہے۔ انہو ںنے کہاکہ 31جولائی کو اے آئی ایس ایف کی 80ویں یوم تاسیس تقریب کاآرٹی سی کلیان منڈپم میںبڑے پیمانے پر منعقد ہوگی۔ جس میں جواہر لال نہرو یونیورسٹی طلبہ تنظیم کے صدر کنہیا کمار شرکت کریں گے اس کے علاوہ ہندوستان بھر کی طلبہ تنظیموں کے قائدین اور کارکنوں کی شرکت بھی  متوقع ہے ۔انہوں نے سیکولر زم کے فروغ اور امن کی برقراری کے لئے سیکولر اور بائیںبازو نظریاتی تنظیموں کو متحد ہوکر فرقہ پرستی کے خلاف جدوجہد کرنے پر زور دیااور کہاکہ گائو کشی کے نام پر ائے دن دلت اور مسلمانوں کو نشانہ بنانے کے واقعات کی روک تھام کے لئے ائے ائی ایس ایف قومی سطح پر تحریک بھی شروع کریگی ۔قومی صدر اے آئی ایس ایف سید ولی اللہ قادری نے  ان دنوں حیدرآباد کے دورہ پر ہیں جہاں سی پی آئی پارٹی ہیڈکوارٹر مخدوم بھون میںگیارہ روزہ سیاسی تربیتی کلاسس میںشرکت کریں گے اس دوران وہ ایچ سی یو‘ عثمانیہ یونیورسٹی ‘ کاکتیہ یونیورسٹی کے طلبہ سے ملاقات بھی کریں گے ۔

TOPPOPULARRECENT