Friday , October 20 2017
Home / جرائم و حادثات / حادثہ میں زخمی 10 سالہ طالبہ رمیا چل بسی

حادثہ میں زخمی 10 سالہ طالبہ رمیا چل بسی

نشہ میں ٹکر مارنے والے طالب علم کے خلاف سخت کارروائی : کمشنر
حیدرآباد ۔ /10 جولائی (سیاست نیوز)  حالت نشہ میں ڈرائیونگ کی شکار 10 سالہ طالبہ رمیا جو 9 دن قبل بنجارہ ہلز علاقہ میں حادثہ میں شدید زخمی ہوگئی تھی آج زخموں سے جانبر نہ ہوسکی ۔ کمشنر پولیس نے حادثہ کا سخت نوٹ لیتے ہوئے خاطی ڈرائیور و انجنیئرنگ طالبعلم کی سزا کو یقینی بنانے فاسٹ ٹریک کورٹ میں مقدمہ چلانے کا اعلان کیا ۔ یکم جولائی کو رمیا اور اس کے دیگر ارکان خاندان سینٹرو کار میں اپنے مکان واپس لوٹ رہے تھے کہ مخالف سمت سے نشہ میں دھت انجنیئرنگ طالبعلم 20 سالہ شراویل نے ان کی کار کو ٹکر دیدی جس کے نتیجہ میں لڑکی کا چاچا 35 سالہ راجیش برسرموقع ہلاک ہوگیا تھا جبکہ اس کار میں سوار دیگر افراد زخمی ہوگئے تھے ۔ ملزم ڈرائیور نے ٹکر کے فوری بعد وہاں سے راہ فرار اختیار کرلی تھی جبکہ اس حادثہ میں شدید زخمی رمیا کو انتہائی تشویشناک حالت میں دواخانہ میں شریک کیا گیا تھا جہاں وہ 9 دن تک موت و زیست کی کشمکش میں مبتلا تھی ۔ ڈاکٹروں نے رمیا کی موت کی آج توثیق کی جس کے بعد کمشنر پولیس مہیندر ریڈی نے لڑکی کی موت کو انتہائی افسوسناک واقعہ قرار دیا ۔ کمشنر نے بتایا کہ ڈرائیور کے خلاف بادی النظر میں ثبوت موجود ہے اور جائے حادثہ کے سی سی ٹی وی ریکارڈنگ حاصل کی گئی ہے جو ملزم کو سزاء دلانے میں مددگار ثابت ہوگی ۔ انہوں نے بتایا کہ ڈرائیور کی شناخت کیلئے شناختی پریڈ کرائی جائیگی اور اس کیس کو مضبوط کرنے پولیس کوئی کسر نہیں چھوڑے گی ۔ انہوں نے بتایا کہ شراویل اور اسکے ساتھی نشہ میں گاڑی چلارہے تھے اور 21 سال عمر سے کم نوجوانوں کو شراب فروخت کرنے والے بار انتظامیہ کے خلاف بھی کارروائی کی جائیگی ۔ اس سلسلے میں آبکاری کمشنر سے ربط پیدا کیا گیا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ سٹی پولیس ملزم ڈرائیور کو سزا دلانے کی ہرممکن کوشش کریگی اور اس کیلئے جلد چارج شیٹ داخل کی جائے گی ۔ انہوں نے بتایا کہ مستقبل میں حالت نشہ میں ڈرائیونگ سے متعلق حادثات کی روک تھام کیلئے دیگر محکمہ جات کی مدد سے موثر اقدامات کئے جائیں گے ۔

TOPPOPULARRECENT