Saturday , August 19 2017
Home / شہر کی خبریں / حج درخواست گذاروں کی سہولت کیلئے دفتر حج کمیٹی آج کھلا رہیگا

حج درخواست گذاروں کی سہولت کیلئے دفتر حج کمیٹی آج کھلا رہیگا

حیدرآباد ۔ 6 فبروری (پریس نوٹ) حج 2016ء کیلئے درخواست فارم داخل کرنے کی آخری تاریخ 8 فبروری ہے۔ خواہشمند عازمین حج کو درخواستیں داخل کرنے کی سہولت فراہم کرنے کے مقصد سے کل  اتوار 7 فبروری کو اتوار کی تعطیل کے باوجود دفتر حج کمیٹی کھلا رہے گا۔ اسپیشل آفیسر تلنگانہ اسٹیٹ حج کمیٹی پروفسیر ایس اے شکور نے خواہشمند عازمین حج سے اپیل کی ہیکہ وہ اس سہولت سے استفادہ کرتے ہوئے باوقات دفتر حج فارم حاصل کرلیں۔ حج ہاؤز میں ہی فارم کی خانہ پری کی سہولت مہیا کی گئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ حج درخواست فارم آن لائن بھی داخل کئے جاسکتے ہیں۔ درخواست فارم کے ساتھ فی کس 300 روپئے اسٹیٹ بینک آف انڈیا کے علاوہ یونین بینک آف انڈیا کی کسی بھی برانچ میں بطور فیس جمع کئے جائیں۔ اکاونٹ نمبر 35398104789 اسٹیٹ بینک آف انڈیا یا پھر اکاونٹ نمبر 318702010406010 یونین بینک آف انڈیا میں جمع کئے جاسکتے ہیں۔ آج شام دفتر حج کمیٹی میں جملہ 12786 درخواستیں وصول ہوئیں، جن میں شہر اور اضلاع کے علاوہ آن لائن وصول ہونے والی درخواستیں بھی شامل ہیں۔ محفوظ زمروں کے تحت درخواست گذاروں کو درخواست کے ساتھ ہی اوریجنل پاسپورٹ داخل کرنا ہوگا۔ پروفیسر ایس اے شکور نے مزید بتایا کہ درخواست گذاروں کی سہولت کیلئے حج کمیٹی کی جانب سے ان کی دستاویزات کے فری زیراکس کی سہولت بھی فراہم کی گئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ تلنگانہ اسٹیٹ حج کمیٹی کی جانب سے اس سال بھی آندھراپردیش کے عازمین حج کی درخواستوں کی وصولی سے لے کر ان کی روانگی اور واپسی کے انتظامات کئے جارہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ عازمین حج کے انتخاب کیلئے 15 مارچ سے 23 مارچ تک کبھی بھی قرعہ اندازی ہوگی۔ جن درخواست گذاروں کا انتخاب عمل میں آئے گا ان کو پہلی قسط کی رقم ادا کرنے کیلئے 8 اپریل تک مہلت دی جائے گی۔ 15 اپریل تک پاسپورٹ، بینک چالان اور میڈیکل سرٹیفکیٹ داخل کئے جاسکتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ اس سال وقوف عرفات یعنی حج 10 ستمبر کو مقرر ہے۔ 4 اگست 2016ء سے 5 ستمبر تک حج چارٹرڈ فلائیٹس کی روانگی عمل میں آئے گی۔ پہلے مرحلہ میں عازمین مدینہ منورہ اور دوسرے مرحلہ میں راست مکہ مکرمہ روانہ ہوں گے۔ حج کے بعد 15 ستمبر سے حجاج کرام کی واپسی کا عمل ہوگا۔ انہوں نے بتایا کہ اس سال 2011ء کی مردم شماری کی بنیاد پر ریاستوں کو حج کوٹہ الاٹ کیا جارہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT