Saturday , September 23 2017
Home / شہر کی خبریں / حج مصارف کی دوسری قسط ادائیگی کی آج آخری تاریخ

حج مصارف کی دوسری قسط ادائیگی کی آج آخری تاریخ

حج تربیتی اجتماع ، مولانا شاہ جمال الرحمن، مفتی عبدالوہاب ، ایس اے شکور کا خطاب
حیدرآباد18 جون (پریس نوٹ ) اسپیشل آفیسر تلنگانہ اسٹیٹ حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور نے کہا کہ حج کے انتظامات کو قطعیت دی جارہی ہے اورامور مکمل ہوتے جارہے ہیں۔ حج مصارف کی دوسری قسط کی ادائیگی کی کل 19جون کوآخری تاریخ ہے‘ امید ہے کہ اس میں آٹھ دس دن کی توسیع ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ عازمین کرام اپنے اس مقدس سفر کے دوران صبر و تحمل کا جتنا زیادہ ہوسکے مظاہرہ کریں اور جلد بازی ‘ بے چینی اور اضطراب کا مظاہرہ نہ کریں۔ وہ آج مسجد عامرہ عابڈز میں تلنگانہ اسٹیٹ حج کمیٹی کے زیر اہتمام عازمین حج کے ساتویں تربیتی اجتماع سے خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ عازمین کی خدمت اور رہنمائی کے لئے14 خادم الحجاج کا قرعہ اندازی کے ذریعہ انتخاب عمل میںآچکا ہے۔ تلنگانہ کو سعودی عربین ایر لائنز الاٹ کیا گیا ہے۔ عازمین کی روانگی 13 اگست سے 22اگست تک ہے ۔ حیدرآباد سے تلنگانہ ‘ آندھرا پردیش اور کرناٹک کے بعض اضلاع کے عازمین کی حالت احرام میں راست براہ جدہ مکہ معظمہ روانگی عمل میں آئے گی۔ واپسی مدینہ منورہ سے 20ستمبر سے 29ستمبر تک مقرر ہے اور جس فلائیٹ سے روانگی عمل میں آئے گی واپسی بھی اسی لحاظ سے ہوگی۔ اب وقت بہت کم رہ گیا ہے آپ لوگ تیاریاں شروع کردیں۔ ایر پورٹ پر یو ڈی ایف 2082روپئے ہے جو آپ کی ادا کردہ رقم میں شامل ہے۔ اس اجتماع میں موجود چھ خادم الحجاج کا تعارف کروایا گیا۔ اس موقعہ پر پروفیسر ایس اے شکور نے عازمین کے مختلف سوالات کے جواب دیتے ہوئے کہا کہ انفرادی شیڈول کا آٹھ دس دن میں اعلان کیا جائے گا۔ مولانا شاہ محمد جمال الرحمٰن مشیر امارت ملت اسلامیہ و خطیب جامع مسجد معظم پورہ ملے پلی نے فصائیل و آداب زیارت روضہ نبوی ﷺ بیان کرتے ہوئے کہا کہ پوری زمین پر جو بابرکت شہر ہیں وہ مکہ المکرمہ اور مدینہ منورہ ہیں ۔ مکہ لاالہ الا اللہ کی جلوہ گاہ اور مدینہ منورہ محمد رسول اللہ کا محور ہے۔ ہمارے لئے دونوں ضروری ہیں۔ مدینہ منورہ میں اللہ کے حبیب کی مسجد دیکھیں‘ روضہ نبوی ﷺ کی زیارت کریں اور وہاں صلواۃ و سلام کا ندرانہ پیش کریں یہ ہر مسلمان کی تمنا ہوتی ہے۔ جہاں آپ آرام فرما ہیں‘ وہ تو ساری دنیا میں مقدس ترین اور ادب کی سب سے زیادہ ملحوظ رکھی جانے والی جگہ ہے ۔ مولانا مفتی عبدالوہاب ( نیلور) نے مخاطب کرتے ہوئے تفصیل کے ساتھ مناسک حج و عمرہ بیان کئے اور مختلف مرحلوں کی اہمیت اور عظمت پر روشنی ڈالی۔ انہوں نے کہا کہ10ذی الحجہ کو تمام امورسے فارغ ہونے کے بعد نہا دھو کر اپنے معمول کے لباس میں آجائیں ‘ اس کے بعد ایک فرض طواف زیارت کا باقی رہ جاتا ہے جو 10ذی الحجہ سے لے کر 12ذی الحجہ تک ادا کرلینا ہے۔ انہوں نے عازمین کو مشورہ دیا کہ وہ مناسک کے بارے میں علما کرام سے مشورہ لیا کریں اور معتبر کتابوں کا مطالعہ کرتے رہیں۔ بعد ازاں انہوں نے آداب زیارت روضہ نبوی ﷺ بیان کرتے ہوئے کہا کہ مدینہ منورہ ہمارے آقا ﷺ کا شہر ہے‘ وہاں اپنی آواز کو پست رکھیں‘ اور اس شہر مقدس کے آداب کا لحاظ رکھیں۔ حج کمیٹی کے عہدیدار جناب عرفان شریف نے انتظامات کی نگرانی کی۔ اجتماع میں عازمین کی کثیر تعداد شریک تھی خواتین کے لئے بالائی منزل پر علیحدہ انتظام کیا گیا ۔

TOPPOPULARRECENT