Monday , October 23 2017
Home / شہر کی خبریں / حج کوٹہ میں اضافہ کیلئے نمائندگی کا تیقن

حج کوٹہ میں اضافہ کیلئے نمائندگی کا تیقن

مرکزی وزیر لیبر بنڈارو دتاتریہ کا حج ہاؤز میں خطاب

حیدرآباد۔/13مارچ ، ( سیاست نیوز) مرکزی وزیر لیبر بنڈارودتاتریہ نے تیقن دیا کہ وہ تلنگانہ کے حج کوٹہ میں اضافہ کیلئے مرکزی وزیر اقلیتی اُمور نجمہ ہپت اللہ اور دیگر متعلقہ وزراء سے نمائندگی کریں گے۔ حج ہاوز میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے بنڈارو دتاتریہ نے کہا کہ تلنگانہ کی تشکیل کے بعد حج کوٹہ میں اضافہ ضروری ہے اور انہیں اس سلسلہ میں ڈپٹی چیف منسٹر اور دوسروں نے توجہ دلائی ہے۔ وہ نجمہ ہپت اللہ سے بات چیت کریں گے اور اس بات کو یقینی بنائیں گے کہ حج 2016کیلئے تلنگانہ کا حج کوٹہ گزشتہ سے زائد ہو۔ ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے بتایا کہ تلنگانہ کا حج کوٹہ کافی کم ہے۔ تلنگانہ میں مسلمانوں کی تعداد 42لاکھ ہے جبکہ حج کوٹہ 2700 کا ہے جبکہ ضرورت 4500کی ہے۔ انہوں نے اس سلسلہ میں مرکز سے نمائندگی کا اعلان کیا۔ انہوں نے بتایا کہ ضرورت پڑنے پر وہ نئی دہلی کا دورہ کریں گے اور مرکزی وزراء سے ملاقات کریں گے۔ اسی دوران اسپیشل آفیسر حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور نے بتایا کہ ریاستوں کیلئے حج کوٹہ کا تعین اندرون دو یوم کردی جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ اور آندھرا پردیش کے عازمین حج کی قرعہ اندازی توقع ہے کہ 20مارچ کو ہوگی۔ مرکزی حج کمیٹی نے اس تاریخ کا تعین کیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ملک کیلئے حج کوٹہ ایک لاکھ 36ہزار 20 ہے۔ حیدرآباد سے جاریہ سال 12000 سے زائد درخواستیں داخل کی گئیں جبکہ حیدرآباد کا کوٹہ صرف 600کا ہے۔ موجودہ صورتحال میں حج کوٹہ گزشتہ سال کے مطابق ہی رہنے کا امکان ہے۔ انہوں نے بتایا کہ آندھرا پردیش میں گزشتہ سال کے کوٹہ سے صرف 50درخواستیں زائد داخل ہوئی ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ خادم الحجاج کی روانگی کے سلسلہ میں اس بات کو یقینی بنایا جائے گا کہ خادم الحجاج کی حیثیت سے دوسری مرتبہ نہ جائیں۔ انہوں نے کہا کہ شکایت ملنے پر نہ صرف خادم الحجاج کے متعلقہ محکمہ جاتی کارروائی کی جائے گی بلکہ اس کے حج کے اخراجات کی رقم وصول کی جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT