Tuesday , August 22 2017
Home / شہر کی خبریں / حج کیمپ و حج ٹرمنل کی تیاریاں مکمل، کل سے عازمین کی آمد کا آغاز

حج کیمپ و حج ٹرمنل کی تیاریاں مکمل، کل سے عازمین کی آمد کا آغاز

س2ستمبر کو چیف منسٹر تلنگانہ کے چندرشیکھر راؤ عازمین کو جھنڈی دکھا کر روانہ کرینگے

حیدرآباد۔/29اگسٹ، ( سیاست نیوز) حج 2015 کیلئے حج کیمپ اور حج ٹرمنل کی تمام تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں۔ پیر 31 اگسٹ سے عازمین حج کی آمد کا سلسلہ شروع ہوجائے گا۔ اس طرح حج کیمپ کا باقاعدہ حج ہاوز میں آغاز ہوگا۔ 2ستمبر سے عازمین حج کی پروازیں شروع ہوں گی جو 8ستمبر تک جاری رہیں گی۔ ایک ہفتہ میں 16 فلائیٹس کے ذریعہ تلنگانہ، آندھرا پردیش اور کرناٹک کے تقریباً 5200 سے زائد عازمین شمس آباد انٹرنیشنل ایرپورٹ سے بحالت احرام جدہ روانہ ہوں گے۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ 2ستمبر کی شام روانہ ہونے والے تیسرے قافلہ کو وداع کریں گے تاہم ابھی اس سلسلہ میں چیف منسٹر کے دفتر سے وقت کا تعین باقی ہے۔ اسی دوران ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے آج اعلیٰ عہدیداروں کے ساتھ شمس آباد انٹرنیشنل ایرپورٹ کے حج ٹرمنل اور حج ہاوز میں حج کیمپ کا معائنہ کیا۔ انہوں نے تمام تیاریوں کی تکمیل اور انتظامات پر اطمینان کا اظہار کیا اور کہا کہ حکومت چاہتی ہے کہ عازمین حج کیلئے بہتر سے بہتر انتظامات کئے جائیں۔ ایر انڈیا کے حکام سے خواہش کی گئی کہ وہ عازمین کی فلائیٹس کی روانگی کو شیڈول کے مطابق عمل میں لائیں اور روانگی میں کوئی تاخیر نہ ہو۔ حج ٹرمنل میں جی ایم آر، ایرانڈیا، کسٹمس، ایمیگریشن، سی آئی ایس ایف اور دیگر محکمہ جات کے عہدیداروں نے ٹرمنل میں کئے گئے انتظامات سے واقف کرایا۔ پہلی مرتبہ حج ٹرمنل کو مکمل ایر کنڈیشنڈ کیا گیا ہے اور سامان کی منتقلی کیلئے بیلٹ کی سہولت فراہم کی گئی۔ اس طرح عازمین کو اب اپنا سامان ڈھونے کی زحمت نہیں ہوگی۔ ایرانڈیا کے حکام نے واضح کیا کہ سنٹرل حج کمیٹی نے فی عازم جو دو سوٹ کیس فراہم کئے ہیں اس کے علاوہ کوئی اور لگیج قبول نہیں کیا جائے گا تاہم واپسی میں 5لیٹر زم زم کا کیان لگیج کے حساب میں نہیں رہے گا۔ سکریٹری اقلیتی بہبود شریمتی جی ڈی ارونا، ڈائرکٹر اقلیتی بہبود جلال الدین اکبر، اسپیشل آفیسر حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور اور ڈائرکٹر اقلیتی فینانس کارپوریشن شفیع اللہ نے ڈپٹی چیف منسٹر کو حج ٹرمنل میں کئے گئے انتظامات اور حج کیمپ کی سہولتوں سے آگاہ کیا۔ جنرل منیجر جی ایم آر یشپال سنگھ نے بتایا کہ گزشتہ سال کی طرح اس سال بھی حج ٹرمنل میں عازمین کیلئے بہتر انتظامات رہیں گے۔ اس کے علاوہ وزیٹرس کیلئے بھی بیرونی حصہ میں خصوصی انتظامات کئے گئے ہیں۔ حج ہاوز میں شامیانے کی تنصیب، الکٹریکل فٹنگس، عارضی ٹائلیٹس کے علاوہ عازمین کی رہائش کے انتظامات مکمل کرلئے گئے ہیں۔ پروفیسر ایس اے شکور نے تمام شعبہ جات کا معائنہ کرایا۔ انہوں نے بتایا کہ لگیج، پاسپورٹ، کرنسی کی اجرائی، کسٹمس، ایمیگریشن اور دیگر سرکاری اُمور کی تکمیل حج ہاوز میں مکمل کرلی جائے گی اور ایر انڈیا عازمین کو حج ہاوز میں ہی جاری کرے گا۔ عازمین حج کی روانگی ہر سال عمارت کے سیلر سے ہوا کرتی تھی لیکن اس مرتبہ کھلی اراضی پر واٹر پروف پنڈال نصب کیا گیا ہے جہاں سے عازمین کو وداع کیا جائے گا۔ اس خصوصی پنڈال کے ایک گوشہ میں سرکاری محکمہ جات کے کاؤنٹرس قائم کئے گئے ہیں۔ تلنگانہ اور آندھرا پردیش کے علاوہ کرناٹک کے 4اضلاع کے عازمین حیدرآباد سے روانہ ہوں گے۔ ڈپٹی چیف منسٹر کو زیر تعمیر کامپلکس میں عازمین کی رہائش کیلئے کئے گئے انتظامات اور طعام کی سہولتوں سے بھی واقف کرایا گیا۔ ایک ہفتہ میں چار دن روزانہ 3فلائیٹس روانہ ہوں گی جبکہ ایک دن 2فلائیٹس اور باقی دو دن ایک، ایک فلائیٹ روانہ ہوگی۔ عازمین حج کی واپسی کا مدینہ منورہ سے 14اکٹوبر کو آغاز ہوگا اور آخری قافلہ 20اکٹوبر کو حیدرآباد پہنچے گا۔

TOPPOPULARRECENT