Sunday , August 20 2017
Home / شہر کی خبریں / حج کیمپ کے آغاز کیلئے دو دن باقی ، حج ہاوز میں نل کنکشن عدم بحال

حج کیمپ کے آغاز کیلئے دو دن باقی ، حج ہاوز میں نل کنکشن عدم بحال

محکمہ واٹر ورکس میں ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی کی ہدایت نظر انداز
حیدرآباد ۔ 9 ۔ اگست (سیاست نیوز) اب جبکہ حج 2017 ء کے کیمپ کے آغاز کو دو دن باقی ہے، ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی کی ہدایت کے باوجود واٹر ورکس کے حکام نے حج ہاؤز کا نل کنکشن بحال نہیں کیا ہے۔ گزشتہ دنوں حج انتظامات کے سلسلہ میں منعقدہ اجلاس میں ڈپٹی چیف منسٹر نے واٹر ورکس عہدیداروں کو ہدایت دی تھی کہ وہ فوری طور پر واٹر کنکشن بحال کردیں اور بقا یا جات کے بارے میں تصفیہ بعد میں کیا جائے ۔ عہدیداروں نے اجلاس میں تیقن دیا لیکن 10 دن گزرنے کے باوجود ابھی تک واٹر کنکشن بحال نہیں کیا گیا جس سے حج ہاؤز کی عمارت صاف پینے کے پانی کی سربراہی سے محروم ہے۔ واٹر کنکشن کی بحالی اور بقایا جات کے معاملہ کی یکسوئی کیلئے چیف اگزیکیٹیو آفیسر وقف بورڈ منان فاروقی نے آج مینجنگ ڈائرکٹر واٹر ورکس دانا کشور اور ان کے ماتحت عہدیداروں سے ملاقات کی۔ واضح رہے کہ واٹر ورکس ڈپارٹمنٹ نے وقف بورڈ کو آبرسانی کے بقایہ جات کے طور پر 85 لاکھ روپئے ادا کرنے کی نوٹس جاری کی ہے۔ یہ رقم حقیقی بل کے علاوہ مختلف مراحل پر عائد کردہ پنالٹی پر مبنی ہے۔ وقف بورڈ نے تین مرحلوں میں 75,000 روپئے جمع کئے تھے لیکن 85 لاکھ روپئے کی نوٹس سے حکام حیرت میں پڑ گئے۔ بتایا جاتا ہے حج ہاؤز کا ماہانہ واٹر بل 4 تا 5 ہزار روپئے تھا جس کی عدم ادائیگی پر یہ بڑھتے ہوئے پانچ لاکھ تک پہنچ گیا۔ 2013 ء کے بعد واٹر ورکس ڈپارٹمنٹ میں بقایا جات اور پنالٹی کے ساتھ نوٹس جاری کردی۔ وقف بورڈ اس موقف میں نہیں کہ مکمل رقم ادا کرے۔ کئی برسوں سے آبرسانی کنکشن منقطع ہونے کے سبب حج ہاؤز صاف پینے کے پانی سے محروم ہے اور اس عمارت میں موجود دفاتر پینے کا پانی خرید کر استعمال کر رہے ہیں جبکہ استعمال کیلئے پانی بورویل سے حاصل کیا جارہا ہے ۔ حج کیمپ کے آغاز سے قبل واٹر کنکشن بحال کرنے کیلئے منان فاروقی کی مساعی کامیاب رہی اور اعلیٰ عہدیداروں نے اندرون دو یوم کنکشن بحال کرنے کا تیقن دیا ہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ واٹر ورکس عہدیداروں نے پنالٹی کے طور پر زائد رقم شامل کرنے کا اعتراف کیا اور امکان ہے کہ 85 لاکھ کا یہ معاملہ تین تا چار لاکھ روپیوں میں حل ہوجائے گا۔ اس طرح کئی برسوں سے واٹر ورکس کے ساتھ جاری تنازعہ کی یکسوئی ہوجائے۔

TOPPOPULARRECENT