Tuesday , September 26 2017
Home / شہر کی خبریں / حج ہاؤز میں صاف صفائی کا ناقص انتظام، کئی جگہوں پر گندگی

حج ہاؤز میں صاف صفائی کا ناقص انتظام، کئی جگہوں پر گندگی

سکریٹری اقلیتی بہبود کا دورہ، عہدیداروں کے ناقص انتظامات پر ناراضگی، آٹھ یوم میں صفائی کی ہدایت
حیدرآباد۔/23جولائی، ( سیاست نیوز) حج سیزن 2016 کے انتظامات کا جائزہ لینے کیلئے سکریٹری اقلیتی بہبود اور اسپیشل آفیسر حج کمیٹی نے دیگر عہدیداروں کے ساتھ آج حج ہاوز کا تفصیلی دورہ کیا۔ حج کیمپ کا انعقاد حج ہاوز میں عمل میں آتا ہے اور عازمین حج کیلئے قیام و طعام کی سہولتیں فراہم کی جاتی ہیں۔ اگرچہ حج ہاوز کی عمارت عازمین حج کے قیام کیلئے تعمیر کی گئی تھی لیکن آج یہ عمارت اقلیتی بہبود کے دفاتر اور چند خانگی اداروں کے دفاتر کا مرکز بن چکی ہے اور وہاں عازمین کیلئے رہائش کی گنجائش تقریباً ختم ہوگئی۔ 8 منزلہ عمارت کے معائنہ کے دوران عہدیداروں کو یہ جان کر حیرت ہوئی کہ عمارت میں جگہ جگہ گندگی ہے اور صفائی کا کوئی انتظام نہیں۔ اس کے علاوہ بعض غیر مجاز افراد نے رہائش کیلئے کمروں پر عملاً قبضہ کرلیا ہے۔ وقف بورڈ جو اس عمارت کے مینٹننس کا ذمہ دار ہے وہ اپنی ذمہ داری کی تکمیل میں بری طرح ناکام ہوچکا ہے۔ عہدیداروں نے جس کمرہ کا بھی معائنہ کیا وہاں گندگی اور کچرے کے انبار دیکھے گئے صرف آندھرا پردیش وقف بورڈ کے دفاتر میں ماحول صاف ستھرا دیکھا گیا جو عمارت کی 5 ویں منزل پر واقع ہے۔ سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل نے وقف بورڈ کے عہدیداروں پر اس صورتحال کیلئے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے اندرون 8 یوم تمام مینٹننس کے کاموں کی تکمیل کی ہدایت دی۔ انہوں نے آٹھویں منزل سے سیلر تک ہر منزل کا معائنہ کیا۔ جاریہ سال حج سیزن میں عازمین کی روانگی کے انتظامات سیلر سے کئے جانے کا امکان ہے لیکن عمارت کے سیلر میں اس قدر گندگی ہے کہ عازمین کی پاکیزگی متاثر ہوسکتی ہے۔ اس گندگی اور بدبو کو دیکھ کر سکریٹری اور اسپیشل آفیسر ایس اے شکور حیرت میں پڑ گئے۔ انہوں نے مینٹننس عہدیداروں اور وقف بورڈ کے متعلقہ عہدیداروں کو تمام تفصیلات نوٹ کراتے ہوئے اندرون 8 یوم تمام اُمور کی تکمیل کی ہدایت دی۔ عہدیداروں نے حج ہاوز سے متصل کھلی اراضی کا بھی معائنہ کیا اور صفائی انتظامات کی ہدایت دی۔ حج کمیٹی کو ابھی یہ طئے کرنا باقی ہے کہ رہائش اور روانگی کے انتظامات کس علاقہ سے کرائے جائیں۔ بتایا جاتاہے کہ تلنگانہ اور آندھرا پردیش کے عازمین حج کی حج ہاوز سے روانگی کے پیش نظر روزانہ 1100 عازمین کے لئے رہائش کے انتظامات ضروری ہیں۔ عمارت میں تقریباً 200عازمین کے قیام کی گنجائش ہے جبکہ کھلے حصے کے ٹینٹ میں 700عازمین کیلئے انتظامات کئے جاسکتے ہیں۔ حج کمیٹی نے زیر تعمیر عمارت کی دو منزلوں میں بھی رہائشی انتظامات کا فیصلہ کیا ہے۔ عازمین حج کی پروازیں 21 تا 28 اگسٹ مقرر ہیں اور روزانہ 2 تا 3 پروازیں روانہ ہوسکتی ہیں۔ تلنگانہ اور آندھرا پردیش کے عازمین کیلئے ایر انڈیا کی جملہ 15 پروازیں ہوں گی۔ زیر تعمیر عمارت کے گراؤنڈ فلور پر کھانے کے انتظامات کئے جارہے ہیں اور فرسٹ اور سکینڈ فلور پر رہائش کے انتظامات کی صورت میں عازمین کو حوائج ضروریہ کیلئے دو منزل اُترنا پڑیگا جو ضعیف عازمین کیلئے زحمت کا باعث ہوگا۔ پروفیسر ایس اے شکور نے بتایا کہ وقف بورڈ کی جانب سے مینٹننس کے کاموں کی تکمیل کے بعد قطعی منصوبہ تیار کیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT