Wednesday , August 16 2017

حدیث

حضرت ابوسعید رضی اﷲ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ (ایک دن ) ہم لوگ آپس میں مسیح دجّال کے فتنوں اور اس کے ابتلاء کا ذکر کررہے تھے کہ رسول کریم صلی اﷲ علیہ و آلہٖ وسلم آکر ہمارے درمیان تشریف فرما ہوگئے اور ( پھر ہماری بات چیت سن کر ) فرمانے لگا کہ کیا میں تمہیں اس چیز کے بارے میں نہ بتلاؤں جو میرے نزدیک (یعنی میری شریعت اور میرے طریق میں … ) تمہارے حق میں مسیح دجّال کے فتنہ سے بھی زیادہ خوفناک ہے ( اور اس اعتبار سے اس کا لحاظ رکھنا اور اس سے اجتناب کرنا تمہارے لئے نہایت ضروری ہے ) ۔ ہم نے عرض کیا کہ ہاں ! یا رسول اﷲ ! ( اس چیز کے بارے میں ہمیںضرور بتائیے ) آپؐ نے فرمایا ’’وہ چیز شرک خفی ہے ( اور شرک خفی اس چیز کو کہتے ہیں کہ ) مثلاً ایک آدمی نماز کے لئے کھڑا ہوتا ہے اور نماز پڑھتا ہے اور اس نماز کے تمام ارکان یا بعض ارکان میں (کیفیت یا کمیت کے اعتبار سے ) غلو اور زیادتی کرتا ہے ، محض اس لئے کہ کوئی شخص اس کو نماز پڑھتے دیکھ رہا ہے ‘‘۔     (ابن ماجہ )

TOPPOPULARRECENT