Sunday , August 20 2017
Home / ہندوستان / حذف ریمارکس نشر کرنے پر میڈیا کیخلاف کارروائی کی جائے : اپوزیشن

حذف ریمارکس نشر کرنے پر میڈیا کیخلاف کارروائی کی جائے : اپوزیشن

نئی دہلی 21 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) راجیہ سبھا میں آج شوروغل دیکھنے میں آیا جب اپوزیشن کے اراکین بشمول کانگریس والوں نے بعض میڈیا گھرانوں کے خلاف تحریک مراعات کی کارروائی شروع کرنے کا مطالبہ کیا کیوں کہ ایک ایس پی لیڈر کے حذف شدہ ریمارکس کو نشر و اشاعت میں شامل کیا گیا ہے۔ اِس گڑبڑ کے نتیجہ میں ایوان کی کارروائی کا مختصر التواء ہوا۔ اپوزیشن نے الزام عائد کیاکہ ایس پی لیڈر نریش اگروال کے حذف ریمارکس کی نشر و اشاعت کے سبب اُن کے مکان پر بی جے پی یوتھ کارکنوں نے حملہ کیا ہے۔ ڈپٹی چیرمین پی جے کورین نے تیقن دیا کہ وہ احتجاجی ارکان کے مطالبہ کا جائزہ لیں گے لیکن اُن سے کہاکہ پہلے مادی شواہد کے ساتھ نوٹس دی جائے۔

دارجلنگ بدامنی کیلئے ممتا ذمہ دار مرکزی حکومت کا دعویٰ
نئی دہلی 21 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) حکومت نے آج چیف منسٹر مغربی بنگال ممتا بنرجی کو دارجلنگ میں بدامنی کے لئے مورد الزام ٹھہراتے ہوئے کہاکہ اُن کا رویہ اور اِس مسئلہ سے نمٹنے کا انداز پُرسکون پہاڑی علاقے کو آگ کا گولہ بناچکا ہے۔ وزیر پارلیمانی اُمور اننت کمار نے لوک سبھا کو بتایا کہ مرکز، ریاست اور گورکھا لینڈ ٹریٹوریل اڈمنسٹریشن کے بشمول سہ فریقی بات چیت اِس خطے میں امن بحال ہونے کے بعد ہی منعقد کی جاسکتی ہے۔ اُنھوں نے یہ بیان اُس وقت دیا جب محمد سلیم (سی پی آئی ۔ ایم) نے یہ مسئلہ وقفہ صفر میں اُٹھاتے ہوئے ممتا بنرجی پر الزام عائد کیاکہ وہ پہاڑی خطے کے عوام پر حکمرانی کے مختلف اُمور اپنی مرضی مسلط کرنے کی کوشش کررہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT