Wednesday , August 23 2017
Home / ہندوستان / حریت کانفرنس پر ہماری پالیسی میں تبدیلی نہیں : پاکستان

حریت کانفرنس پر ہماری پالیسی میں تبدیلی نہیں : پاکستان

یہ تنظیم کشمیر کے عوام کی امنگوں کی نمائندہ ، پاکستانی ہائی کمشنر عبدالباسط کا بیان
نئی دہلی ، 12 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان کی حریت قائدین کے تئیں پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں ہے کیونکہ وہ کشمیریوں کی آواز کی نمائندگی کرتے ہیں، پاکستانی ہائی کمشنر عبدالباسط نے آج یہ بات کہی اور امید ظاہر کی کہ عمل مذاکرات روکا نہیں جائے گا چاہے کوئی رکاوٹیں کیوں نہ پیدا ہوجائیں۔ یہ ریمارکس ایک روز بعد سامنے آئے جبکہ وزیراعظم پاکستان کے مشیر برائے امور خارجہ سرتاج عزیز نے اعلان کیا تھا کہ دونوں ملکوں کے معتمدین خارجہ آئندہ ماہ میٹنگ منعقد کریں گے تاکہ نئے معلنہ جامع باہمی مذاکرات کی تفصیلات طئے کی جاسکیں۔ یہ میٹنگ دہلی میں منعقد ہونے کی توقع ہے۔ باسط یہاں ’’آج تک ایجنڈہ‘‘ پروگرام میں مخاطب تھے۔ انھوں نے کہا، ’’حریت کشمیر کے عوام کے امنگوں کی نمائندہ (تنظیم) ہے۔ جہاں تک ہمارا معاملہ ہے، اُن کے تئیں ہماری پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں ہوئی ہے‘‘۔ اُن سے سوال کیا گیا تھا کہ اگر ہندوستان اور پاکستان کے درمیان بات چیت ہونے لگے تو کیا حریت قائدین کو دہلی میں موجود ہونے پر ڈنر کیلئے مدعو کیا جائے گا؟ کشمیری علحدگی پسندوں کے ساتھ پاکستان کی مشاورتوں پر برہم ہوکر ہندوستان نے گزشتہ سال اگسٹ میں دونوں ملکوں کے معتمدین خارجہ کے درمیان بات چیت منسوخ کردی تھی، اور اس سے صریح طور پر کہہ دیا تھا کہ ہند۔ پاک مذاکرات یا علحدگی پسندوں کے ساتھ میل جول میں سے کسی ایک چیز کو منتخب کرلیں۔ باسط نے بات چیت کے احیاء کو باہمی روابط میں نیا مرحلہ قرار دیا اور کہا کہ مذاکرات میں منفی رجحان ختم ہونا چاہئے۔

TOPPOPULARRECENT