Friday , August 18 2017
Home / بچوں کا صفحہ / حسد: نیکیاں ختم کردیتا ہے …!

حسد: نیکیاں ختم کردیتا ہے …!

ابو ! آپ کو معلوم ہے آج اس فاروق کے بہت اچھے نمبر آئے ہیں وہ تو ہر چیز میں میرا مقابلہ کرتا ہے ۔ اب پڑھائی میں بھی وہ میرا مقابلہ کرنے لگ گیا ہے ۔ جب ٹیچر نے اس کیلئے تالیاں بجائیں تو میرا جی چاہا کہ اس کا منہ نوچ لوں ۔ آپ کو معلوم نہیں کہ میں نے اپنے غصے پر کس طرح قابو پایا ۔ حسن بولے جارہا تھا ۔
آج شام سردی بہت تھی اور سب انگیٹھی کے قریب اپنے ہاتھ تاپ رہے تھے ۔ انگیٹھی میں پڑی لکڑیوں کو آگ اس طرح ختم کررہی تھی کہ بار بار لکڑیاں ڈالنے کی ضرورت پڑ رہی تھی  ۔ ابو نے کچھ سوچ کر حسن سے کہا ’’ حسن بیٹا دیکھو ! آگ ان لکڑیوں کو کیسے کھا رہی ہے ۔ ہاں ابو ! حسن نے ابو کی بات سن کر جواب دیا ۔ بیٹا ! اسی طرح حسد انسان کو کھاجاتا ہے ۔ جس طرح اس انگیٹھی میں پڑی لکڑیاں راکھ میں تبدیل ہو رہی ہیں ۔ اسی طرح حسد انسان کو ختم کردیتی ہے ۔ حسن بیٹا ! آپ اپنے کلاس فیلوز سے کتنا حسد کرتے ہو ان کی کامیابیوں پر کڑھتے ہو آپ کو معلوم ہے حسد کے چکر میں پڑکر آپ کو ناکامی ہی ملے گی ۔ اس لئے بہتر یہ ہے کہ حسد نہیں محنت کرو ۔ محنت ہی کامیابی کی ضمانت ہے ۔ مل جل کر رہو مل جل کر پڑھو ۔ اس طرح اتفاق بھی قائم رہے گا ۔ آپ اپنی کلاس میں جن لڑکوں سے حسد کرتے ہو ان لڑکوں سے دوستی کا رشتہ استورا کرو اور ہاں میری ایک بات یاد رکھنا حسد کرنے والے لوگ ہمیشہ ناکام رہتے ہیں ۔ اب حسن کو ابو کی بات مکمل طور پرسمجھ میں آچکی تھی ۔ اس نے  وعدہ کیا کہ وہ کبھی بھی کسی سے حسد نہیں کرے گا۔

TOPPOPULARRECENT