Friday , July 21 2017
Home / دنیا / حسن روحانی کو کان کے حادثہ پراحتجاج کا سامنا

حسن روحانی کو کان کے حادثہ پراحتجاج کا سامنا

تہران۔7مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) صدر ایران حسن روحانی کو آج مہلوکین کے برہم ارکان خاندان کے احتجاج کا سامنا کرنا پڑا جب کہ وہ ایک کان میں حادثہ کے مقام پر پہنچے جس میں کئی افراد ہلاک ہوگئے ہیں ۔ یہ حادثہ صدارتی انتخابات سے دو ہفتہ قبل پیش آیا ہے ۔ مقامی خبررساں اداروں نے ارکان خاندان کو صدر ایران پر چیختے چلاتے اور ان کی کار پر حملہ کرتے دکھایا ہے ۔ جب کہ وہ شمالی صوبہ گولستان میں کان کے حادثہ کے مقام کا دورہ کرنے پہنچے جس میں کم از کم 26افراد ایک دھماکہ کی وجہ سے ہلاک ہوگئے تھے ۔ پورا ایران ہلاک ہونے والے افراد کے ارکان خاندان کے غم میں برابر کا شریک ہے ۔ یہ حادثہ زمستان یورت کی کان میں پیش آیا ۔ صدر روحانی نے حکومت کی ویب سائیٹ پر کہا کہ جو لوگ حادثہ کے ذمہ دار ہیں اور جو بھی اس کے خاطی قرار پائیں ان کی تلاش اور قرارواقعی سزا کسی استثنی کے بغیر ضروری ہے ۔ انہوں نے 26 افراد کے ہلاک ہونے کی توثیق کی ‘ جبکہ 9کانکن اب بھی دھماکہ کے بعد کان میں پھنسے ہوئے ہیں ۔ تاہم عہدیداروں کا کہنا ہے کہ ان کے زندہ بچ جانے کی امید موہوم ہیں ۔ یہ حادثہ سمجھا جاتا ہے کہ میتھین گیس کے جمع ہوجانے کی وجہ سے دھماکہ ہونے پر ہوا ۔ جب کہ کارکنوں نے ایک انجن کو کارکرد کرنے کی کوشش کی ۔ کارکنوں اور ان کے برہم ارکان خاندان نے کہا کہ حفاظتی انتظامات ناقص ہے اور اجرتیں بھی بہت تاخیر سے ادا کی جاتی ہیں ۔کارخانوں میں ملک گیر سطح پر یہ مسئلہ عام ہے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT