Sunday , October 22 2017
Home / شہر کی خبریں / حسین ساگر جھیل کو بدبو سے پاک کیا جائیگا

حسین ساگر جھیل کو بدبو سے پاک کیا جائیگا

نالہ کا رخ موڑ نے اور خوشبو دار پودوں کی شجر کا ری کا منصوبہ
حیدرآباد 28 فبروری ( آئی این این ) حسین ساگر جھیل سے اٹھنے والی بدبو کو بہت جلد قصہ پارینہ بنادیا جائیگا ۔ حیدرآباد میٹو پولیٹن ڈیولپمنٹ اتھاریٹی کے کمشنر چرنجیولو نے یہ بات بتائی ۔ مسٹر چرنجیولو حیدرآباد کیا کاتھن کے دوسرے ایڈیشن میں ایوارڈز پیش کرنے کی تقریب سے خطاب کر رہے تھے ۔ کمشنر ایچ ایم ڈی اے نے کہا کہ کوکٹ پلی سے آنے والا ایک نالا ( ڈرینیج ) حسین ساگر جھیل کو آلودہ کر رہا ہے ۔ اس نالہ کا رخ بدلنا ابھی باقی ہے ۔ رخ بدلنے کا کام کیا جا رہا ہے اور اس کو بہت جلد مکمل کرلیا جائیگا ۔ انہوں نے بتایا کہ ہم سنجیویا پارک کی 95 ایکڑ اراضی پر روز گارڈن کی طرز پر مزید چار گارڈنس تعمیر کئے جائیں گے ۔ یہ گارڈنس کاشی ونم ‘ بمبو ونم اور نکشترا ونم جیسے ہونگے ۔ سکریٹری سیاحت محکمہ سیاحت و مہمان خصوصی بی وینکٹیش نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ حیدرآباد کو انتہائی سرگرم شہر بنایا جائے ۔ ہم حیدرآباد کو ایسا مقام اور شہر بنانا چاہتے ہیں جس کا ہر سیزن میں دورہ کیا جاسکے ۔ حسین ساگر جھیل سے ہونے والی بدبو کے تعلق سے بی وینکٹیش نے کہا کہ یہاں اطراف میں سینکڑوں خوشبودار پورے لگائے جائیں گے ۔ تاکہ عوام کو اچھی خوشبو محسوس ہسکے ۔ حسین ساگر جھیل کو شہر کی بہترین جھیلوں میں بدلا جائیگا اور اسے بدبو والی جھیل سے خوشبو والی جھیل کا موقف دیا جائیگا ۔ انہوں نے کہا کہ یہ جھیل شہر کے وسط میں واقع ہے اور اس سے کافی فائدہ حاصل کیا جاسکتا ہے ۔ یہاں کیا کاتھن اور دوسری اسپورٹس سرگرمیوں کو فروغ دیا جاسکتا ہے ۔ بہت جلد حسین ساگر جھیل کو ایک تقریبی مرکز بنادیا جائیگا ۔ محکمہ سیاحت اور ثقافت کی جانب سے یہاں مسلسل ایک سال تک تقاریب کی منصوبہ بندی کی جائیگی ۔ بدھا مجسمہ کے اطراف بدھ ازم سے متعلق تقاریب منعقد کی جائیں گی ۔ اسی طرح محکمہ کی جانب سے ساری حسین ساگر جھیل کے اطراف بتھکما تہوار منعقد کیا جائیگا ۔

TOPPOPULARRECENT