Tuesday , September 26 2017
Home / Top Stories / حسین ساگر میں بحری بس کی سیاحت کا آغاز

حسین ساگر میں بحری بس کی سیاحت کا آغاز

حیدرآباد کو عالمی طرز پر ترقی دینے حکومت کی مساعی کا عملی اقدام
حیدرآباد۔ 15 مارچ (سیاست نیوز) حکومت تلنگانہ نے محکمہ سیاحت کی جانب سے پیش کردہ بحری بس کی تجویز کو قبول کرتے ہوئے حسین ساگر میں بحری بس کی سیاحت کے آغاز کو منظوری دے دی ہے۔ ریاستی حکومت نے حیدرآباد کو عالمی طرز کے شہروں کی فہرست میں شامل کرنے کے لئے متعدد اقدامات کا آغاز کیا ہے جس میں فروغ سیاحت کو ترجیح دی جارہی ہے۔ سیکریٹری محکمہ سیاحت مسٹر بی وینکٹیشم کے بموجب ریاست تلنگانہ، ملک میں پہلی ریاست ہوگی جہاں بحری بس کی سیاحت سے استفادہ کیا جئاے گا۔ اس سیاحت کے آغاز کے فوری بعد شہر میں سیاحت کو نیا فروغ حاصل ہوگا اور حسین ساگر کی سیاحت کیلئے پہونچنے والوں کی تعداد میں زبردست اضافہ کی توقع کی جارہی ہے۔ محکمہ سیاحت کے تیار کردہ منصوبہ کے مطابق بحری بس کی سیاحت کا آغاز خانگی عوامی شراکت داری منصوبہ کے تحت کیا جائے گا اور اس سلسلے میں خانگی کمپنیوں سے اشتراک پر غور کیا جارہا ہے۔ بحری بس بیرونی ممالک میں انتہائی اہم سیاحت تصور کی جاتی ہے اور حسین ساگر میں سیاحت کے آغاز کے لئے بھی بحری بس کسی بیرونی ملک سے منگوانی ہوگی اور اس کے لئے 5 تا 6 ماہ کا عرصہ درکار ہوسکتا ہے۔ مسٹر بی وینکٹیشم کے بموجب اب تک کے منصوبہ کے مطابق بحری بس کی خدمات خانگی آپریٹرس کو تفویض کی جائیں گی۔ چند یوم قبل ریاستی وزیر سیاحت نے بتایا تھا کہ حکومت کی جانب سے سیاحت کے فروغ کیلئے کئے جانے والے اقدامات میں ہیلی کاپٹرس کی سیاحت کے آغاز کے بعد اب بحری بس کا منصوبہ تیار کیا جارہا ہے۔ مسٹر چندو لعل اجمیرا کے اس انکشاف کے بعد اب حکومت نے اس تجویز کو منظوری دے دی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ بحری بس حسین ساگر کے اطراف سڑک پر سیاحت کے بعد اب اسے ساگر میں موجود پانی پر اُتارا جائے گا اور یہ بحری بس پانی پر بھی بہ آسانی سڑک کی طرح پُل سکتی ہے جس کے لئے بس میں دو انجن موجود ہیں۔ بحری بس کی سیاحت عمدلاً سمندری شہروں میں ہوا کرتی ہے لیکن ہندوستان میں اب تک بھی کسی سمندری ساحلی شہر میں اس منفرد سیاحت کا آغاز نہیں کیا گیا لیکن شہر حیدرآباد میں موجود حسین ساگر میں اس سمندری بس کی سیاحت کے آغاز سے عوام کی دلچسپی میں اضآفہ ہوسکتا ہے۔ ذرائع سے موصولہ اطلاعات کے بموجب اس بحری بس کی سیاحت کے ساتھ حکومت کی جانب سے پانی میں کھیلے جانے والے بعض بین الاقوامی کھیلوں پر بھی توجہ دی جارہی ہے تاکہ بحری بس کی سیاحت کے ساتھ آبی کھیلوں کے فروغ کو بھی یقینی بنایا جاسکے۔ بحری بس سیاحوں کے لئے جتنی دلچسپی کا باعث ہوگی، اس سے زیادہ اسے محفوظ بنانے کے اقدامات کئے جارہے ہیں جبکہ بحری بس میں تیراکی اور ہنگامی حالات سے نمٹنے کے آلات ہمیشہ موجود رہتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT