Sunday , October 22 2017
Home / اضلاع کی خبریں / حضرت علیؓ علم کا دروازہ اور ولایت کے امام

حضرت علیؓ علم کا دروازہ اور ولایت کے امام

بیدر۔ 11 اپریل ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) حضرت علی مرتضیؓ کی کعبۃ اللہ میں ولادت ہوئی اور جب انہوں نے آنکھ کھولی تو سب سے پہلے آقائے نامدار رسول مقبولؐ کے چہرے مبارک کو دیکھا۔ ان خیالات کا اظہار پیران طریقت ڈاکٹر خلیفہ شاہ محمد ادریس احمد قادری سجادہ نشین آستانہ قادریہ بگدل میں منعقدہ ماہانہ مرکزی جلسہ جشن مولود و فضیان حضرت خواجہ معین الدین چشتی غریب نواؒ سے مخاطب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ سرکار مدینہ فرماتے ہیں کہ میں علم کا شہر ہوں اور حضرت علی کرم اللہ وجہہ اس کے دروازہ ہیں۔ حضور نبی کریمؐ فرماتے ہیں کہ جس نے علیؓ سے محبت کی، اس نے مجھ سے محبت کی گویا اس نے اللہ سے محبت کی اور جس نے میرے اہل بیت اطہار سے دشمنی کی ، وہ مجھ سے دشمنی کی گویا وہ اللہ سے دشمنی کی۔ ڈاکٹر خلیفہ شاہ محمد ادریس احمد قادری نے کہا کہ اللہ تعالیٰ نے حضرت علیؓ کو علم کی دولت سے مالامال فرمایا اور حضرت علی ولایت کے امام ہیں۔ حضرت سید نا خواجہ غریب نواز ؒکا فیض ساری دنیا میں آج بھی جاری ہے اور صبح قیامت تک جاری رہیگا۔ خواجہ غریب نواز ؒ کو عاجزوں کی فریاد رسی ، حاجت مندوں کی حاجت روائی ، بھوکوں کو کھانا کھلانا بہت پسند تھا اسی غریب پروری کے سبب انہیں عوام نے’’ غریب نواز‘‘کے مبارک لقب سے پکار نا شروع کردیا ۔ انہوں نے حضرت خواجہ معین الدین چشتی اجمیری کے حالات زندگی پر تفصیلی طور پر سیر حاصل روشنی ڈالتے ہوئے تلقین کی کہ اولیاء اللہ کی تعلیمات ہمارے لئے مشعل راہ ہیں۔انہوں نے مزید بتایا کہ مئی کی 6، 7اور 8تاریخ کو سالانہ مرکزی جلسہ بضمن عرس و صندل شریف حضرت سید نا عبدالقادر شاہ ولی سوائی گنج بخش بادشاہ ناگوری ؒ بمقام آستانہ قادریہ بگدل میںمقرر ہے جس کی ابتدائی تیاریاںجاری ہیں۔مولانا مفتی شفیق احمد قادری نقشبندی حیدرآباد نے مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ اللہ نے 18ہزار مخلوقات میں انسان کو اشرف المخلوقات بناکر اپنی عبادت کیلئے دنیا میں بھیجا ۔انہوں نے کہا کہ حضرت بانی جامعہ نظامیہ کی والدہ فرماتی ہیں کہ میری شادی کے بعد ایک عرصہ تک مجھے کوئی اولاد نہیں ہوئی حضرت یتیم شاہ مجذوب ؒ نے کہا کہ تمہیں لڑکا ہوگا وحافظ قرآن ہوگااور محافظ علوم فرقان ہوگا۔مولوی عبدالحمید رحمانی چشتی صدر اصلاح معاشرہ نے کہا حضرت علی کا مقام اتنا بلند ہے کہ آپ کی ولادت خانہ کعبہ میں ہوئی ۔ انہوں نے حضرت علی ؓ کی سیرت پر تفصیلی روشنی ڈالی ۔اتر پردیش کے ممتا زقول جناب ٹھاکر عرف چھوٹے عزیز نے ساز پر نعتیہ ،منقبتی ، عرفانی اور صوفیانہ کلام پیش کرکے مریدین معتقدین اور سامعین پر بے خودی کی طاری کردی ۔ تیری صورت میری نگاہوں میں پھرتی رہے::عشق تیرا ستائے تو میں کیا کروں،دما دم مست قلندر ولی کا پہلا نمبر:میں تو دیوانہ خواجہ کا دیوانہ :تاجدار حرم او نگاہ کرم :و چراغ جلاتے ہیں اور یہاں دل جلائے جاتے ہیں ::عاشقی دلگی نہیں ہوتی ۔کلاموں پر سامعین نے خوب داد دی ۔ شہ نشین پر مولوی محمد لئیق احمد قادری بگدلی ، سید اکبر محی الدین مشائخ بالا پور ،ڈاکٹر جاوید حیدرآباد اور دیگر موجود تھے۔ تمام مہمان اور مریدین کی بدست سجادہ نشین شالپوشی وگلپوشی کی گئی۔ قبل ازیں خلیفہ شاہ محمد ادریس احمد قادری کی نگرانی میں محفل نعت پاک ، درس تصوف ،حلقہ ذکر، فاتحہ تقسیم تبرکات عمل میں آئے۔جلسہ کی کارروائی کا آغاز قراء ت کلام پاک سے ہوا محمد اویس قادری بگدلی اور دیگر نے نعت رسول ؐسنانے کی سعادت حاصل کی ۔ جلسہ میں ملک کے مختلف مقامات سے مریدین معتقدین کی کثیر تعداد دیکھی گئی ۔ لنگر خانہ قادریہ میں حسب روایت لنگر کا خصوصی اہتمام کیا گیا تھا۔قبل از وقت فجر جلسہ تکمیل پذیر ہوا۔

TOPPOPULARRECENT