Sunday , August 20 2017
Home / Top Stories / حلب میںباغیوں کے علاقہ مساکین حنانو پرشامی افواج کاقبضہ

حلب میںباغیوں کے علاقہ مساکین حنانو پرشامی افواج کاقبضہ

دولت اسلامیہ کی طاقت میں بتدریج کمی کے بعد تمام زیر قبضہ علاقوں پر حکومت کا قبضہ بحال

دمشق ۔ 27نومبر ( سیا ست ڈاٹ کام ) شامی افواج نے مشرقی حلب پر سے قبضہ چھوڑانے کے لیے پیش قدمی کا آغاز کر دیا ہے شام کے سرکاری ذرائع ابلاغ کے مطابق حکومتی افواج نے مشرقی حلب میں باغیوں کے زیرقبضہ سب سے بڑے قصبے پر دوبارہ قبضہ حاصل کر لیا ہے۔انسانی حقوق کے کارکنوں کا کہنا ہے کہ شمال مشرقی حلب میں مساکین حنانو پر قبضے سے شامی فوج کو باغیوں کے زیر قبضہ دیگر علاقوں پر کنٹرول حاصل کرنے میں مدد فراہم کرے گا۔شامی حکومت نے مشرقی حلب پر واپس قبضہ حاصل کرنے کے لیے 15 نومبر کو پیش قدمی کا آغاز کیا تھا جہاں تقریباً 275000 افراد پھنسے ہوئے ہیں۔برطانیہ میں قائم انسانی حقوق کی تنظیم شامی رصدگاہ کا کہنا ہے کہ اب تک اس حملے میں 212 عام شہری مارے جا چکے ہیں جن میں 27 بچے بھی شامل ہیں۔بعض اطلاعات کے مطابق اس علاقے میں طبی سہولتیں اور خوراک کی بھی قلت ہے۔مساکین حنانو وہ پہلا علاقہ تھا جس پر 2012 میں باغیوں نے قبضہ حاصل کیا۔

سرکاری خبر رساں ایجنسی صنعا کا کہنا ہے کہ ’شامی افواج اب اس قصبے پر مکمل کنٹرول حاصل کر چکی ہیں اور علاقے کو دھماکہ خریز مواد سے صاف کیا جا رہا ہے۔‘شامی رصدگاہ نے خبر رساں ادارے کو بتایا ہے کہ ’فوجی اب مشرقی حلب کے شمالی علاقوں کو جنوبی علاقوں سے الگ کرنے سے چند میٹر ہی کے فاصلے پر ہیں۔‘گروپ نے مزید بتایا کہ حلب کے دیگر علاقوں کو بھی نشانہ بنایا گیا ہے۔شامی حکومت اور اس کے اتحادی روس جاریہ برس 18 اکتوبر کو حلب میں عام شہریوں اور باغیوں کو حلب چھوڑنے کی اجازت دینے کے لیے فضائی حملوں کو روک دیا تھا تاہم بہت کم افراد نے اس پر عمل کیا تھا۔شام میں پانچ برس سے جاری لڑائی میں اب تک 250,000 سے زیادہ افراد ہلاک اور تقریباً ایک کروڑ 20 لاکھ نقل مکانی پر مجبور ہو چکے ہیں۔دولت اسلامیہ نے اپنی طاقت میں اضافہ کرتے ہوئے شام اور عراق کے 70فیصد سے زیادہ علاقہ پر قبضہ کرلیا تھا لیکن اپنے حامیوں کی امداد مسدود ہوجانے کے بعد سے دولت اسلامیہ کے عسکریت پسند کمزور ہوتے گئے اور حکومت شام اور حکومت عراق نے ان تمام علاقوں پر اپنا قبضہ بحال کرلیا جہاں سے اُس کا قبضہ ختم ہوگیا تھا اور یہ علاقے باغیوں کے زیرقبضہ آچکے تھے لیکن اب آہستہ آہستہ تمام علاقوں پر حکومتیں اپنا قبضہ بحال کرتی جارہی ہیں  ۔

TOPPOPULARRECENT