Monday , June 26 2017
Home / شہر کی خبریں / حکومت آبپاشی پراجکٹس کی تکمیل کے لیے پابند عہد

حکومت آبپاشی پراجکٹس کی تکمیل کے لیے پابند عہد

اپوزیشن کی مخالفت کی کوئی پرواہ نہیں ، ہریش راؤ کا بیان
حیدرآباد۔/10جنوری، ( سیاست نیوز) وزیر آبپاشی ہریش راؤ نے کہا کہ آبپاشی پراجکٹس کی تعمیر کے خلاف لاکھ مخالفت اور سازشیں کی جائیں حکومت بہر صورت ان کی تکمیل کرکے رہے گی۔ وزیر آبپاشی نے میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ سنہرے تلنگانہ کی تشکیل کے مقصد سے حکومت نے آبپاشی پراجکٹس کی تعمیر کا منصوبہ تیار کیا ہے اور اپوزیشن جماعتیں غیر ضروری مخالفت کرتے ہوئے ترقی میں رکاوٹ پیدا کرنا چاہتی ہیں۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ اپوزیشن جماعتیں پراجکٹس کے متاثرین کے بھیس میں سازشیں کررہی ہیں حالانکہ حکومت نے جن کسانوں سے اراضی حاصل کی ہے انہیں مناسب معاوضہ ادا کیا ہے۔ اس کے علاوہ کسان اپنی مرضی سے اراضی حوالے کررہے ہیں تاکہ آبپاشی کیلئے درکار پانی سیراب کیا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ ایک کروڑ ایکر اراضی کو پانی سربراہ کرنے کے نشانہ کے تحت مشن کاکتیہ پروگرام کا آغاز کیا گیا اور مختلف پراجکٹس کو قطعیت دی گئی۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن جماعتیں عدالت سے رجوع ہوکر اور احتجاج کے ذریعہ حکومت کے عزائم کو کمزور نہیں کرسکتیں۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ پراجکٹس کی تعکمیل کے عہد کے پابند ہیں اور کوئی بھی طاقت ان کی راہ میں رکاوٹ نہیں بن سکتی۔ انہوں نے کہا کہ تمام پراجکٹس کی مقررہ وقت پر تکمیل حکومت کا مقصد ہے۔ ہریش راؤ نے بتایا کہ کالیشورم پراجکٹ کی تکمیل سے شمالی تلنگانہ سرسبز و شاداب علاقہ میں تبدیل ہوجائے گا۔ ہریش راؤ نے آج منچریال میں ریاستی وزیر جوگو رامنا کے ہمراہ لفٹ اریگیشن اسکیم کے تحت پانی جاری کیا۔ انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ وہ اپوزیشن جماعتوں کے بہکاوے میں نہ آئیں اور پراجکٹس کی تعمیر کے سلسلہ میں بے بنیاد الزامات اور گمراہ کن پروپگنڈہ کا شکار نہ ہوں۔ وزیر آبپاشی نے بتایا کہ حکومت مشن کاکتیہ اور مشن بھگیرتا کے ذریعہ آبپاشی اور پینے کے پانی کی سہولتوں کو فراہم کرنے کا تہیہ کرچکے ہیں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT