Sunday , August 20 2017
Home / سیاسیات / حکومت آمرانہ ایجنڈے پر عمل پیرا : کانگریس

حکومت آمرانہ ایجنڈے پر عمل پیرا : کانگریس

فاشسٹ طرز عمل اختیار کرنے کا الزام ، لوک سبھا میں ملک ارجن کھرگے کا بیان
نئی دہلی ۔ 26 جولائی ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) کانگریس نے آج حکومت پر الزام عائد کیا کہ وہ فاشسٹ طرز عمل اختیار کرتے ہوئے اپوزیشن کی آواز کو دبانے آمرانہ ایجنڈے پر عمل کررہی ہے ۔ ملک میں ہجوم کی جانب سے مسلمانوں پر حملے کئے جانے جیسے اہم مسائل پر مباحث کی اجازت نہیں دی جارہی ہے ۔ کانگریس نے اس مسئلے پر وزیراعظم کی خاموشی کا سوال اُٹھایا ۔ لوک سبھا میں کانگریس لیڈر ملک ارجن کھرگے نے سوال کیا کہ آخر کانگریس اور دیگر اپوزیشن پارٹیوں کو قومی تشویش سے متعلق مسائل اُٹھانے کا حق کیوں چھین لیا جارہا ہے ؟ اور آخر وزیراعظم اس مسئلے پر خاموش کیوں ہے ؟ مسلمانوں پر ہونے والے حملوں پر مباحث سے بی جے پی گریز کررہی ہے ۔ ملک ارجن کھرگے نے اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی حکومت نے فاشسٹ طرز عمل اختیار کر لیا ہے اور قوم کو درپیش مسائل پر مباحث کرنے سے لوک سبھا کو روکنے کیلئے آمرانہ ایجنڈہ روبعمل لارہی ہے ۔ وزیراعظم نے پارلیمنٹ میں خاموشی اختیار کرنے کو ترجیح دی ہے جبکہ وہ جلسہ عام میں اندھا دھند تقاریر کررہے ہیں۔ وہ عوام کی نمائندگی کررہے ہیں اور ایوان کے لیڈر کی حیثیت سے انھیں پارلیمنٹ کو ہر بات سے مطلع کرنا ہوگا ۔ جب ملک میں بحران پیدا ہوتا ہے تو وہ ایوان کے اندر صرف پانچ تا دس منٹ کیلئے آتے ہیں اور چلے جاتے ہیں۔ یہ رویہ جمہوریت اور دستور کو نظرانداز کردینے جیسا ہے۔ کھرگے نے یہ بھی الزام عائد کیا کہ اسپیکر نے مسلمانوں پر بڑھتے حملوں کے خلاف اپوزیشن کے اُٹھائے گئے مسائل پر مباحث کرنے کیلئے زور دینے پر کانگریس کے چھ ارکان کو معطل کردیا گیا، کیونکہ حکومت نے اسپیکر پر دباؤ ڈالا تھا ۔ ہم اسپیکر کے فیصلے کا احترام کرتے ہیں لیکن جو الزامات لگائے گئے ہیں وہ جانبدارانہ ہیں۔ اگر اسپیکر ہی جانبداری سے کام لیتے ہیں تو یہ افسوسناک تبدیلی ہے ۔ پارلیمنٹ کے باہر ملک ارجن کھرگے کے ہمراہ ایوان سے معطل شدہ کانگریس کے چھ ارکان پارلیمنٹ بھی موجود تھے۔ انھوں نے کہاکہ امتیازی سلوک کی سب سے بڑی مثال سب کے سامنے ہے ۔ عام آدمی پارٹی کے رکن بھگوت مان کو پارلیمنٹ عمارت کا ویڈیو بنانے کیلئے معطل کیا جاتا ہے اور بی جے پی کے انوراگ ٹھاکر جب ایوان کی کارروائی کا ویڈیو بناتے ہیں تو انھیں مستقبل میں ایسا نہ کرنے کی وارننگ دی جاتی ہے ۔ ایک ہی ایوان میں ایک ہی طرح کے جرم کیلئے دو اصول اختیار کئے جارہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT