Wednesday , August 23 2017
Home / دنیا / حکومت بنگلہ د یش کی انٹرنیٹ سے ذاکر نائیک کی تمام تقاریر حذف کرنے کی ہدایت

حکومت بنگلہ د یش کی انٹرنیٹ سے ذاکر نائیک کی تمام تقاریر حذف کرنے کی ہدایت

ڈھاکہ ۔ 12 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) بنگلہ دیش حکومت نے فیصلہ کیا ہیکہ انٹرنیٹ سے تمام اشتعال انگیز اسلامی تقاریر کو حذف کردیا جائے گا۔ یہ فیصلہ ’’پیس ٹی وی‘‘ پر امتناع عائد کرنے کے صرف ایک روز بعد کیا گیا ہے جو ہندوستانی مبلغ ذاکر نائیک کی سرپرستی میں چلایا جاتا ہے۔ دریں اثناء وزیراطلاعات حسن الحق نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ اس سلسلہ میں ہم نے پہلے ہی ایک سرکلر جاری کردیا ہے۔ تاہم اس کو مزید اہمیت کا حامل بناتے ہوئے بی ٹی آر سی (بنگلہ دیش ٹیلی کمیونکیشن ریگولیٹری اتھاریٹی) کیلئے ایک اعلامیہ بھی جاری کیا گیا ہے کہ ذاکر نائیک کی ایسی تمام اشتعال انگیز اسلامی تقاریر کو انٹرنیٹ کے ریکارڈس سے حذف کردیا جائے۔ مسٹر حق نے کہا کہ انہوں نے اپنے دفتر کو خصوصی ہدایت دی ہیکہ کل تک یہ اعلامیہ بی ٹی آر سی تک پہنچ جانا چاہئے۔ قبل ازیں بی ٹی آر سی صدرنشین شاہجہاں محمود نے بتایا کہ ریگولیٹری باڈی کو حکومت کی ہدایت کا انتظار تھا کہ یوٹیوب سے ذاکر نائیک کی تقاریر کا مواد مکمل طور پر حذف کردیا جائے کیونکہ حالیہ دنوں میں دہشت گرد حملوں میں ملوث افراد نے یہ ادعا کیا تھا کہ انہوں نے ذاکر نائیک کی تقاریر سننے کے بعد حملہ کرنے کا فیصلہ کیا تھا اور وہ ان کی تقاریر سے بیحد متاثر تھے۔

TOPPOPULARRECENT