Sunday , April 23 2017
Home / سیاسیات / حکومت جوابدہی نہیں چاہتی : کانگریس

حکومت جوابدہی نہیں چاہتی : کانگریس

نئی دہلی ۔ /6 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی کی مرکز میں برسراقتدار حکومت پر ’’منافقت اور تضاد بیانی‘‘ کا الزام عائد کرتے ہوئے لوک پال کے تقرر کے بارے میں کانگریس نے کہا کہ این ڈی اے اس مسئلہ پر اپنے قدم پیچھے ہٹارہی ہے کیونکہ وہ جوابدہی نہیں چاہتی ۔ کانگریس کے ترجمان ابھیشیک سنگھوی نے الزام عائد کیا کہ موجودہ حکومت کمزور ، معمولی اور حقیر بہانے بناتے ہوئے ان کی بنیاد پر لوک پال کا تقرر نہیں کررہی ہے ۔ حالانکہ یہ قانون صدرجمہوریہ ہند نے /16 جنوری 2014 ء کو منظور کیا تھا ۔ ابھیشیک سنگھوی نے کہا کہ حکومت میں اس مسئلہ پر خلوص کی کمی ہے ۔ دانستہ طور پر منافقت اور تضاد بیانی کی جارہی ہے ۔ دہلی میں یہ گزشتہ تین سال سے ہورہا ہے ۔ قبل ازیں نریندر مودی 12 سال تک گجرات کے چیف منسٹر رہ چکے ہیں لیکن انہوں نے وہاں لوک آیوکت کا تقرر نہیں کیا ۔ سنگھوی نے کہا کہ لوک سبھا میں چند قراردادیں ترمیم کیلئے پیش کی گئی تھیں ۔ کیا دیگر معاملات میں بھی ایسا کیا گیا ۔ حکومت نے کہا تھا کہ وہ قائد اپوزیشن لوک سبھا کے ساتھ تنازعات کی یکسوئی چاہتی ہے ۔ مرکزی وزیر مملکت جیتیندر نے اپنے بیان میں یہ بات کہی تھی ۔ انہوں نے کہا کہ گجرات کی ریاستی بی جے پی 2003 ء سے لوک آیوکت کے تقرر میں رکاوٹیں پیدا کررہی ہے ۔ مودی نے گجرات میں کچھ نہیں کیا ۔

حسینہ کے دورہ پر تیستا معاہدہ کا امکان نہیں
نئی دہلی ۔ /6 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) دریائے تیستا کے پانی میں شراکت داری کا معاہدہ جو طویل عرصہ تک زیرالتواء ہے امکان نہیں کہ وزیراعظم بنگلہ دیش شیخ حسینہ کے 4 روزہ دورہ کے موقع پر اس پر دستخط ہوجائیں گے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT