Friday , July 21 2017
Home / شہر کی خبریں / حکومت شجرکاری کے بعد پودوں کی آبیاری بھول جاتی ہے

حکومت شجرکاری کے بعد پودوں کی آبیاری بھول جاتی ہے

3 سال سے ہریتا ہارم پروگرام کے نتائج افسوسناک ، شہر میں 2 لاکھ شجر لگانے کا دعویٰ قابل غور
حیدرآباد۔13جولائی (سیاست نیوز) حیدرآباد میں ہر طرف درخت ہی درخت نظر آئیں گے۔ جی ہاں مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کی جانب سے کئے جانے والے دعوے پر یقین کیا جائے تو شہر حیدرآباد میں 12جولائی کو صرف ایک دن میں 2لاکھ 8ہزار 515شجر لگائے جاچکے ہیں اور شجرکاری مہم کے حصہ کے دوران گذشتہ 3برسوں سے ہریتا ہرم پراجکٹ پر عمل آوری کی جا رہی ہے۔ حکومت تلنگانہ نے ریاست میں شجر کاری مہم کو ہریتا ہرم کا نام دیتے ہوئے شروع کیا تھا اور اسی مہم کے حصہ کے طور پر گذشتہ یوم کی گئی شجر کاری کے متعلق مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کے دعوے کے مطابق 2لاکھ 8ہزار 515شجر لگائے گئے ہیں لیکن شہر میں ایسی کوئی سرگرمیاں تو نظر نہیں آئیں اس کے باوجود بلدیہ کی جانب سے کئے جانے والے دعوے کو مان بھی لیا جائے تو یہ کہا جا سکتا ہے کہ اندرون چند ماہ شہر حیدرآباد میں صرف درخت ہی درخت نظر آئیں گے اور آلودگی کا نام و نشان نہیں ہوگا۔ حیدرآباد میں ہی نہیں ریاست بھر میں گذشتہ یوم تیسرے ہریتا ہرم کا انعقاد عمل میںلایا گیا لیکن جی ایچ ایم سی حدود میں گذشتہ دو ہریتا ہرم کے دوران لگائے گئے پودوں کے متعلق عہدیدار یہ بتانے سے قاصر ہیں کہ یہ پودے کہا ںلگائے گئے ہیں اور ان کی اب موجودہ صورتحال کیا ہے۔ تین برسوں کے دوران شہری علاقو ںمیں لگائے گئے پودوں کو نکال پھینکا جا رہا ہے لیکن اس پر توجہ کسی گوشہ سے مبذول نہیں کی جاری ہے بلکہ یہ کہا جا رہا ہے کہ شجرکاری کرنا اور اس کے متعلق شعور بیدار کرنا محکمہ کا کام ہے لیکن ان پودوں کی حفاظت شہریوں کو کرنی چاہئے جبکہ تجارتی علاقوں میں کی جانے والی شجرکاری کو خود شہری برداشت نہیں کرتے بلکہ تجارتی مراکز کے چھپ جانے کے خدشہ کے تحت ان درختوں کو بڑھنے ہی نہیں دیتے ۔ ماحولیات کے متعلق متفکر شہریوں کا کہنا ہے کہ ریاستی حکومت اور مجلس بلدیہ عظیم ترحیدرآباد کے علاوہ دیگر متعلقہ محکمہ جات کی ذمہ داری ہے کہ وہ شجرکاری مہم انجام دینے کے بعد لگائے گئے پودوں کو یوں ہی نہ چھوڑ دیں بلکہ شہریوں کو ان پودوں کی نگہداشت کی سرگرمیوں میں سرگرم کرتے ہوئے مسلسل ان کی حفاظت کو ممکن بنانے کے اقدامات کریں ۔ شہریوں نے بلدی عہدیداروں سے استفسار کیا کہ اب تک کتنے پودے لگائے گئے ہیں اور اب جبکہ 2لاکھ سے زائد پودے ایک دن میں لگائے جانے کا اعلان کیا گیا ہے تو کم از کم ان پودوں کی حفاظت و نگہداشت کو ممکن بنایاجائے تاکہ ماحولیاتی آلودگی میں کمی لائی جا سکے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT