Sunday , August 20 2017
Home / ہندوستان / حکومت مزید 30 ہزار ٹن تور اور اڑد دال درآمد کرے گی

حکومت مزید 30 ہزار ٹن تور اور اڑد دال درآمد کرے گی

نئی دہلی ۔ 3 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) حکومت نے آج سرکاری زیرانتظام ایم ایم ٹی سی کو ہدایت دی کہ مزید 30 ہزار ٹن تور اور اڑد کی دالیں درآمد کرے تاکہ محفوظ ذخیرہ رکھا جاسکے جسے کھلے بازار میں انتہائی ریاستی شرحوں پر فروخت کیا جائے گا تاکہ صارفین کو راحت حاصل ہوسکے۔ ایم ایم ٹی سی حکومت کی ایماء پر دالیں تاحال درآمد کرتی رہی ہے۔ 56 ہزار ٹن دالیں محفوظ ذخائر کے مقصد سے درآمد کی جاچکی ہیں۔ وزارت اغذیہ نے ایک بیان میں کہا کہ حکومت نے فیصلہ کیا ہیکہ مزید 30 ہزار ٹن دالیں جن میں سے 20 ہزار ٹن تور اور 10 ہزار ٹن اڑد دال ہوگی، محفوظ ذخیرہ کیلئے درآمد کرے گی۔ اس فیصلہ پر قیمتوں کے استحکام کے فنڈ کے ایک اجلاس میں جس کی صدارت امور صارفین سکریٹری ہیم پانڈا نے کی، فیصلہ کیا گیا۔ محفوظ ذخیرہ کیلئے دالیں خریدنے اور ان کی تقسیم کا جائزہ لیا گیا۔ محفوظ ذخیرہ دالوں کی کاشتکاروں سے بازار کی قیمت پر راست خریداری کے ذریعہ قائم کیا جارہا ہے جس کیلئے قیمت کے استحکام کا فنڈ اور درآمد دونوں طریقے استعمال کئے جاتے ہیں۔ ذخیرہ کی رعایتی شرح 120 روپئے فی کیلو گرام ہے۔ تاحال 1.75 لاکھ ٹن دالوں کا محفوظ ذخیرہ موجود ہے جس میں سے 1.19 لاکھ ٹن دالیں کاشتکاروں سے ملک کے بازار میں خریدی گئی ہیں۔ مرکز نے کہا کہ اس نے بار بار ریاستی حکومتوں سے درخواست کی تھی کہ تور اور اڑد دال محفوظ ذخیرہ کیلئے چلر فروشوں سے خریدی جائیں۔ ریاستی حکومتوں کی درخواست پر 29 ہزار ٹن دالیں ریاستی حکومتوں کیلئے 18 جنوری کو مختص کی گئیں لیکن صرف تین ریاستوں نے ان کو مختص کی ہوئی دالیں حاصل ہوئیں۔ آندھراپردیش، تلنگانہ اور ٹاملناڈو میں تاحال 4721 ٹن دالیں حاصل کی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT