Saturday , July 29 2017
Home / شہر کی خبریں / حکومت کا طرز عمل انتہائی افسوسناک

حکومت کا طرز عمل انتہائی افسوسناک

ریالی میں انتہا پسندوں کی شرکت کا عذرتلنگانہ تحریک کی توہین: انیل کمار یادو
حیدرآباد 21 فروری (سیاست نیوز) صدر تلنگانہ یوتھ کانگریس انیل کمار یادو نے تلنگانہ جے اے سی کو بے روزگاری کے خلاف ریالی منظم کرنے کی اجازت نہ دینے کی سخت مذمت کرتے ہوئے کسی بھی صورت میں ریالی میں شرکت کا اعلان کیا۔ ریالی میں انتہا پسندوں کے شرکت کرنے کی ہائی کورٹ میں پیش کردہ دلیل کو تلنگانہ تحریک کی توہین قرار دیا۔ انیل کمار یادو نے کہاکہ علیحدہ تلنگانہ تحریک کی کمان سنبھالنے والے پروفیسر کودنڈا رام ہی بے روزگار نوجوانوں کو روزگار فراہم کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے احتجاجی ریالی منظم کررہے ہیں لیکن اچانک ٹی آر ایس کا موقف تبدیل ہوگیا ہے۔ تلنگانہ تحریک میں پروفیسر کودنڈا رام ان کے لئے ہیرو تھے، ملازمتیں طلب کرنے پر حکومت کو ویلن نظر آرہے ہیں۔ 20 دن قبل ہی تلنگانہ جے اے سی کی جانب سے ریالی منظم کرنے کیلئے پولیس سے تحریری طور پر اجازت طلب کی گئی۔ پولیس کی جانب سے ٹال مٹول کی پالیسی اپنانے پر جے اے سی عدلیہ سے رجوع ہوئی مگر ریالی کو روکنے کے لئے حکومت نے ریالی میں انتہا پسند کے شامل ہونے اور لاء اینڈ آرڈر کے بگڑنے کی دلیل پیش کی جو قابل مذمت ہے۔ پروفیسر کودنڈا رام نے ماضی میں کئی تحریکوں، ریالیوں، جلسوں کی قیادت کی ہے کبھی کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا لیکن ریالی کو روکنے کے لئے حکومت سرگرم ہوگئی ہے۔ ٹی آر ایس قائدین کی جانب سے پروفیسر کودنڈا رام کے خلاف توہین آمیز ریمارکس کئے جارہے ہیں جس کی وہ سخت مذمت کرتے ہیں۔ تلنگانہ تحریک کے دوران کانگریس حکومت نے ہر ریالی کی اجازت دی تھی مگر ٹی آر ایس حکومت رکاوٹیں کھڑی کررہی ہے۔ وہ کئی رکاوٹوں کے باوجود کل ریالی میں شرکت کریں گے اور پروفیسر کودنڈا رام اور بے روزگار نوجوانوں سے مکمل اظہار یگانگت کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT