Wednesday , May 24 2017
Home / شہر کی خبریں / حکومت کی آئی پاس پالیسی سے تلنگانہ میں 2929 صنعتوں کا قیام

حکومت کی آئی پاس پالیسی سے تلنگانہ میں 2929 صنعتوں کا قیام

جملہ پانچ لاکھ افراد کو روزگار کے مواقع ۔ اسمبلی میں مباحث پر وزیر آئی ٹی کا اظہار خیال
حیدرآباد۔ 26 ڈسمبر ( سیاست نیوز) ریاستی وزیر کے ٹی آر نے کہا کہ حکومت کی ٹی ایس آئی پاس پالیسی سے ریاست میں 49.463 کرور روپئے کی مصارف سے 2929 صنعتیں قائم ہورہی ہیں جس سے راست 11.95.30 افراد اور بالوسطہ 3لاکھ افراد جملہ 5لاکھ افراد کو روزگار حاصل ہورہے ہیں ۔ تجارت کرنے سارے ہندوستان میں تلنگانہ کو سرفہرست مقام حاصل ہوا ہے ۔ سرمایہ کاری میں بھی تلنگانہ بہت جلد سارے ملک میں سرفہرست بن جانے توقع کا اظہار کیا ۔ آج اسمبلی میں ٹی ایس آئی پاس کے مختصر مباحث میں حصہ لیتے ہوئے وزیر آئی ٹی نے کہا کہ اقتدار حاصل کرنے کے مختصر عرصہ میں ٹی آر ایس حکومت نے نئی صنعتی پالیسی کا اعلان کرکے ہندوستان کے بشمول دیگر ممالک کو سرمایہ کاری کرنے کیلئے راعب کیا ہے ۔ تمام منظوریاں  آن لائن سے مربوط کردی گئی ہے جس سے بدعنوانیوں کا خاتمہ کرنے میں بہت بڑی کامیابی حاصل ہورہی ہے ۔ 200کروڑ روپئے کی سرمایہ کاری کرنے والے صنعت میں جہاں 1000 افراد کو روزگار کے مواقع فراہم کئے جارہے ہیں ۔ ایسی کمپنیوں کو 15دن میں اور اس سے زیادہ سرمایہ کاری کرنے والے کمپنیوں کو ایک ماہ کے دوران تمام منظوریاں دی جارہی ہیں ۔ مقررہ وقت پر کارروائی مکمل نہ کرنے والے عہدیداروں کے خلاف یومیہ 1000 روپئے جرمانہ عائد کیا جارہا ہے ۔ کام کاج کو گھٹانے کیلئے ماضی کے 100منظوریوں کو گھٹاکر 10منظوریوں تک محدود کردیا گیا ہے ۔ ابھی تک ریاست میں 1138کمپنیاں قائم ہوچکی ہیں ۔ 405 کمپنیوں کی تکمیل آخری مراحل میں ہے ۔ بہت جلد 1543 کمپنیاں اپنی خدمات کا آغاز کردیں گی  ۔ آلودگی کے لائسنس کو 5سال سے بڑھاکر 10سال تک کردیا گیا ہے ۔ صنعتی پالیسی میں بڑے پیمانے پر اصلاحات لائے گئے ہیں اور اس کے مثبت نتائج برآمد ہورہے ہیں ۔ صنعتی پالیسی کو بدعنوانیوں سے پاک بنانے کیلئے 22محکمہ جات میں 113 آن لائن خدمات کو متعارف کرایا گیا ہے جس کی وجہ سے تجارت کے معاملہ 98.78 فیصد مارکس حاصل کرتے ہوئے تلنگانہ اور سارے ملک میں سرفہرست رہا ہے ۔ ٹیلیفون کمپنیاں تکنگانہ میں قائم ہورہی ہیں ۔ اس کے علاوہ انٹرنیشنل کمپنیاں تلنگانہ میں سرمایہ کاری کرنے میں اپنی دلچسپی دکھا رہی ہیں ۔ صنعتوں کو صرف حیدرآباد تک محدود رکھنے کے بجائے ریاست کے تمام اضلاع میں پھیلاتے ہوئے تلنگانہ کی ترقی کے منصوبہ تیار کئے گئے ہیں ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT