Tuesday , September 26 2017
Home / ہندوستان / حکومت کی ماحولیاتی پالیسیوں پر اپوزیشن کی تنقید

حکومت کی ماحولیاتی پالیسیوں پر اپوزیشن کی تنقید

نئی دہلی ۔ 15 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) اپوزیشن پارٹیوں نے آج راجیہ سبھا میں عام بجٹ پر مباحث کے دوران معاشی غلطی قرار دیتے ہوئے اس کی بعض ماحولیاتی پالیسیوں پر سخت تنقید کی۔ کانگریس، سماج وادی پارٹی اور جنتادل (یو) نے متحدہ طور پر کاشتکاروں کے محاذ پر حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے اظہارحیرت کیا کہ کیا حکومت کے پاس زرعی شعبہ کیلئے کوئی لائحہ عمل ہے۔ سماج وادی پارٹی کے نریش اگروال نے غریبوں اور کاشتکاروں کو قرضوں کے حصول میں مشکلات کا تبصرہ کیا اور حکومت سے خواہش کی کہ غربت کے پیمانے کی واضح تاریخ کا تعین کیا جائے۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ کمیشن لئے بغیر کوئی قرض حاصل نہیں ہوتا۔ دیہی روزگار طمانیت اسکیم میں بدعنوانیوں کے بارے میں انہوں نے کہا کہ سرپنچ کا انتخاب کافی مہنگا ہوگیا ہے جس کی وجہ سے بدعنوانیاں پھیل رہی ہیں۔ جے ڈی یو کے پون کمار ورما نے بھی حکومت سے بجٹ کے بارے میں سوال کرتے ہوئے بجٹ کو ’’پراسرار‘‘ قرار دیا اور کہا کہ برآمدات مسلسل گذشتہ 15 ماہ سے کم ہوگئی ہیں اور حکومت دعویٰ کرتی ہیکہ ہندوستان کا مستقبل درخشاں ہے۔ کانگریس کے پال چندر منگیرکر نے راجیہ سبھا میں اپنی آخری تقریر کرتے ہوئے کیونکہ وہ جاریہ ماہ سبکدوش ہونے والے ہیں۔ حکومت کی کانگریس دشمن پالیسیوں پر تنقید کی اور خواہش کی کہ وہ اپوزیشن پارٹی پر تنقید کرنے کے بجائے اپنا وقت کام کرنے پر صرف کرے۔ انہوں نے کہا کہ یہ افسوسناک ہیکہ وجئے ملیا جیسے مالدار تاجر ملک چھوڑ کر چلے جاتے ہیں اور حکومت صرف یہ کہتی ہیکہ ان کے فرار کیلئے کانگریس دوراقتدار ذمہ دار ہے۔

TOPPOPULARRECENT