Sunday , October 22 2017
Home / سیاسیات / حکومت کی پاکستان پالیسی لڑکھڑا رہی ہے: منموہن سنگھ

حکومت کی پاکستان پالیسی لڑکھڑا رہی ہے: منموہن سنگھ

گوہاٹی ۔ 6 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) سابق وزیراعظم منموہن سنگھ نے آج کہا کہ نریندر مودی حکومت کی پاکستان پالیسی ’’لڑکھڑا رہی‘‘ ہے۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ ملک کے عوام سے جو احترام کی برقراری کا عہد کیا گیا تھا، اس میں بری طرح ناکام ہوچکی ہے۔ پاکستان کے بارے میں مودی حکومت کی پالیسی لڑا کھڑا رہی ہے۔ پاکستانی دہشت گرد آزادانہ طور پر جموں و کشمیر اور پنجاب و پڑوسی ریاستوں میں سرگرم ہیں۔ راجیہ سبھا میں گذشتہ 10 سال سے آسام کی نمائندگی کرنے والے ڈاکٹر منموہن سنگھ نے کانگریس کے ایک انتخابی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہماری مخدوش حالت کا تازہ ترین ثبوت پٹھان کوٹ دہشت گرد حملہ ہے۔ معاشی اور زرعی محاذوں پر حکومت بڑے پیمانے پر پریشان حال ہندوستانی کاشتکاروں کی مدد سے قاصر ہے۔ مودی کے بیرون ملک دوروں سے عظیم کارناموں کا ادعا کیا جاتا ہے لیکن عوام اچھی طرح جانتے ہیں کہ ان دوروں سے تاحال کوئی فائدہ حاصل نہیں ہوا۔ مودی نے کالادھن بیرون ملک سے وطن واپس لانے اور ہر شہری کے بینک کھاتے میں 15 لاکھ روپئے جمع کروانے کا تیقن دیا تھا لیکن اب تک ایک پیسہ بھی جمع نہیں کروایا جاسکا اور نہ کالادھن وطن واپس آیا۔ انہوں نے آسام کے عوام سے اپیل کی کہ وہ کانگریس کو قطعی اکثریت عطا کریں۔ آسام کے بارے میں انہوں نے کہا کہ غیر کانگریسی دوراقتدار میں ریاست زبردست مصائب کا سامنا کرچکی ہے۔ انہوں نے ایچ سی یو اور جے این یو کے واقعات کو اس بات کی علامت قرار دیا کہ مرکزی حکومت آزادی اظہار کے حق کو کچلنے اور فرقہ وارانہ خطوط پر ہندوستانیوں کی صف بندی کی کوشش کررہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT