Wednesday , July 26 2017
Home / سیاسیات / حکومت کی کارکردگی جاننے کی کوشش پر لوک سبھا میں شوروغل

حکومت کی کارکردگی جاننے کی کوشش پر لوک سبھا میں شوروغل

کانگریس کے سوالات پر وزیر برقی گوئل اور بی جے پی ایم پیز برہم، ماضی کی حکومت کی ناکامی کا تذکرہ
نئی دہلی 16 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) لوک سبھا میں آج وقفہ سوالات کے دوران شوروغل کے مناظر دیکھنے میں آئے، جب اپوزیشن نے برسر اقتدار این ڈی اے کی گزشتہ ڈھائی سالہ کارکردگی کے بارے میں اعداد و شمار جاننا چاہے اور حکومت نے جواب میں کانگریس کی ماضی کی ’ناکامی‘ کے بارے میں فہرست پیش کی۔ جب کانگریس لیڈر ملکارجن کھرگے نے وزیر برقی پیوش گوئل سے مودی حکومت کے مئی 2014 ء میں جائزہ لینے کے بعد سے شروع کردہ برقی پراجکٹوں سے ایوان کو واقف کرانے کے لئے کہا اور جاننا چاہا کہ موجودہ طور پر کتنی برقی پیدا کی جارہی ہے، تب کافی شور مچا اور ایک دوسرے کے خلاف الزامات ، جوابی الزامات کا سلسلہ چھڑ گیا۔ گوئل نے کہاکہ جب اُنھوں نے ڈھائی سال قبل وزارت برقی کی ذمہ داری سنبھالی تب ملک کی برقی صورتحال مایوس کن تھی، کئی نامکمل پراجکٹس تھے اور سات کروڑ گھرانوں کے لئے برقی فراہم نہیں تھی۔ اس جواب پر ملکارجن کی قیادت میں کانگریس ارکان نے پرشور احتجاج کیا اور وہ این ڈی اے حکومت کی کارگزاری کے تعلق سے اعداد و شمار پر مبنی معلومات جاننا چاہتے تھے اور اُنھوں نے دعویٰ کیاکہ وزیر موصوف جواب کو ٹال رہے ہیں۔ تلخ الفاظ کے تبادلوں کے درمیان کانگریس ارکان نے یہ الزام بھی عائد کیاکہ حکومت سابقہ حکومتوں کے شروع کردہ پاور پراجکٹس کا کریڈٹ لینے کی کوشش کررہی ہے اور مودی حکومت کے پرفارمنس کی بابت اظہار کے لئے کچھ بھی نہیں ہے۔ بی جے پی ایم پیز نے کہاکہ اُنھوں نے ماضی میں کانگریس کی ناکامی کی فہرست تیار کر رکھی ہے۔گوئل نے پرزور انداز میں استدلال پیش کیاکہ کئی معرض التواء پراجکٹس جن میں سکم کا 1200 میگاواٹ تیستا ہائیڈرو الیکٹرک پراجکٹ اور شمال مشرق کا سوبن سری ہائیڈرو الیکٹرک پراجکٹ شامل ہیں، اُن تمام کو موجودہ حکومت نے شروع کیا ہے۔ اُنھوں نے دعویٰ کیاکہ نئے پراجکٹوں کے لئے اراضی کی حصولیابی کا عمل آسان بنایا گیا، ملک میں 7 کروڑ گھرانوں کو برقی کنکشن دیا گیا۔ ایک ضمنی سوال کے جواب میں وزیر موصوف نے کہاکہ 2014 ء میں شمسی توانائی سے پیدا شدہ جملہ برقی 2631 میگاواٹ تھی جو اب بڑھ کر10 ہزار میگاواٹ ہوچکی ہے اور سولار پاور کی قیمت گھٹ کر 2.97 روپئے فی یونٹ ہوگئی ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT