Tuesday , September 26 2017
Home / شہر کی خبریں / حیدرآباد انسٹیٹیوٹ آف ایکسلینس کے چار طلبہ کو انٹرمیڈیٹ سال دوم میں اسٹیٹ رینکس

حیدرآباد انسٹیٹیوٹ آف ایکسلینس کے چار طلبہ کو انٹرمیڈیٹ سال دوم میں اسٹیٹ رینکس

تمام طلبہ کی امتیازی کامیابی، ملک کے اعلیٰ معیاری ریسیڈنشیل انسٹیٹیوشنس کی اولین صف میں شمار
حیدرآباد ۔ 24 اپریل (پریس نوٹ) حیدرآباد انسٹیٹیوٹ آف ایکسیلنس کے انٹرمیڈیٹ کے دوسرے بیاچ کے نتائج بھی شاندار رہے جبکہ صدفیصد طلبہ نے امتیازی کامیابی حاصل کی اور 4 طلبہ نے اسٹیٹ رینکس حاصل کئے۔ حیدرآباد انسٹیٹیوٹ آف ایکسیلنس (HIE) وقارآباد میں ایک مکمل ریسیڈنشیل کیمپس ہے جس میں اسکول اور جونیر کالج کے ساتھ ساتھ IIT-JEE، میڈیکل، انجینئرنگ اور ای ٹیکنو پروگرامس کی انٹی گریٹیڈ کوچنگ کے انتظامات ہیں۔ ایچ آئی ای میں دونوں ریاستوں تلنگانہ اور آندھرا کے علاوہ این آر آئی طلبہ کی قابل لحاظ تعداد ہے۔ ہونہار طلبہ کو غیاث الدین بابو خان چیاریٹیبل ٹرسٹ، حیدرآباد زکوٰۃ اینڈ چیاریٹیبل ٹرسٹ اور فاؤنڈیشن فار اکنامک اینڈ ایجوکیشنل ڈیولپمنٹ کی جانب سے اسکالر شپ فراہم کی جاتی ہے۔ ایچ آئی ای میں معاشی طور پر کمزور طلبہ کے داخلے کیلئے تلنگانہ، رائلسیما اور ساحلی آندھرا کے 59 مراکز پر HIESET کا 31 جنوری اور 7 فبروری کو انعقاد عمل میں آیا۔ 6 ہزار 623 طلبہ نے اس میں شرکت کی۔ کمزور معاشی پس منظر کے حامل اور جسمانی طور پر معذورین و یتیم طلبہ کو داخلے دیئے گئے۔ انسٹیٹیوٹ جناب ایم ہدایت اللہ کی زیرنگرانی ہے جنہیں ایمسیٹ JEE اور آئی آئی ٹی اڈوانس اور NEET کا 20 سالہ تجربہ ہے جنہوں نے طلبہ اور ان کے سرپرستوں سے خطاب کرتے ہوئے منتخب طلبہ کے نام کا اعلان کیا۔ ایچ آئی ای ریسیڈنشیل پر مبنی ہے جس کے پروگرام کا آغاز صبح 5 بجے سے ہوتا ہے اور 10.30 بجے شب اس کا اختتام عمل میں آتا ہے۔ دن بھر کی مشغولیات میں جمنازیم، گیمس اینڈ اسپورٹس، انڈورگیمس، کرکٹ، والی بال، فٹبال، سویمنگ، واک اینڈ ہیلتھ رن اور تعلیمی سرگرمیاں شامل ہیں۔ اسلامک اسٹڈیز دینیات، عربی، اخلاقی تعلیم، آئی پی ای، ایمسیٹ، آئی آئی ٹی ۔ مینس اینڈ اوڈانس، میڈیکل اینڈ ایم ای سی جیسے اکیڈیمک پروگرام بھی شامل ہیں۔ ایم پی سی کے ساتھ این ڈی اے کی کوچنگ کیلئے خصوصی بیاچ ہے۔ 111 طلبہ اس پروگرام میں شامل ہیں۔ اسکالر شپ حاصل کرنے والے طلبہ کی تعداد 250 ہے جبکہ مذکورہ بالا ٹرسٹ 250 سے زائد پر سالانہ 6 کروڑ روپئے کے اخراجات برداشت کرتے ہیں۔ جب طلبہ ایچ آئی ای سے فارغ ہوتے ہیں تو انہیں بہترین انجینئرنگ اور میڈیکل کالجس میں داخلہ ملتا ہے۔ ایچ آئی ای، این آر آئیز میں مقبول ترین ہے۔ جناب غیاث الدین بابو خان چیرمین GBKCT نے صرف تین سال کے مختصر عرصہ میں ملک کے بہترین تعلیمی اداروں کی اولین صف میں ایچ آئی ای کے شامل ہونے پر مسرت کا اظہارکیا اور یہ یقین ظاہر کیا کہ آنے والے برسوں میں ایچ آئی ای اعلیٰ تعلیمی معیار کی کسوٹی بن جائے گا۔ ایچ آئی ای سے متعلق مزید تفصیلات ویب سائیٹ www.hie.net.in پر ملاحظہ کریں۔

TOPPOPULARRECENT