Friday , August 18 2017
Home / شہر کی خبریں / حیدرآباد سے دس غباروں کی اڑان کا منصوبہ ٹاٹا انسٹی ٹیوٹ آف فنڈا منٹل ریسرچ کا سائنسی پروگرام

حیدرآباد سے دس غباروں کی اڑان کا منصوبہ ٹاٹا انسٹی ٹیوٹ آف فنڈا منٹل ریسرچ کا سائنسی پروگرام

حیدرآباد ۔ 23 ۔ فروری : ( سیاست نیوز ) : مرکزی حکومت کے ادارہ ٹاٹا انسٹی ٹیوٹ آف فنڈا منٹل ریسرچ نے کہا ہیکہ وہ اواخر ماہ سے ماہ مئی تک کی مدت کے دوران محکمہ ایٹمی توانائی اور ہندوستانی خلائی تحقیق تنظیم اسرو کے تعاون سے سائنسی مقاصد کے لیے حیدرآباد سے دس غبارے لانچ کرے گا ۔ ان غباروں میں ہائیڈروجن گیاس بھری ہوگی اور یہ غبارے سائنٹفک آلے لے جائیں گے ۔ اس ماہ کے ختم تک پہلا غبارہ چھوڑا جائے گا ۔ یہ غبارے دو پالی تھین پلاسٹک فلمس سے بنائے گئے ہیں ا ور پچاس تا 85 میٹر پر محیط ہیں ۔ غبارے تحقیق سے متعلق سائنسی آلات بلندی پر لے جائیں گے ۔ یہ بلندی تیس کلومیٹر تا 42 کلومیٹر ہوگی ۔ یہ آلات دس گھنٹے تک اڑان پر رہیں گے اور پھر انہیں غباروں سے چھوڑا جائے گا ۔ اور یہ آلات بڑے پیراشوٹس پر زمین پر آئیں گے حیدرآباد سے دو سو تا 250 کلومیٹر کی دوری پر یہ غبارے اتریں گے ۔ غبارے وشاکھا پٹنم حیدرآباد شولاپور لائن کی طرف رخ کرسکتے ہیں ۔ پے لوڈ کے زیر اثر آنے والے علاقے حیدرآباد ، رنگاریڈی ، میدک ، محبوب نگر ، نلگنڈہ ، ورنگل ، کھمم ، نظام آباد ، کریم نگر اور عادل آباد اضلاع ہیں سائنسدانوں نے عوام سے اپیل کی ہے کہ پیراشوٹس اور آلات دستیاب ہونے پر انہیں لکڑی کے صندوقوں یا بڑے المونیم فریمس کے نیچے رکھیں اور اسے لینڈنگ کے مقامات سے نہ ہٹائیں اور مختلف پیاکیجس پر درج پتے پر ربط کریں ۔ یا فون کال کریں ۔ قریبی پولیس اسٹیشن ، پوسٹ آفس یا ضلعی حکام سے رابطہ کریں اور اطلاع دیں ۔

TOPPOPULARRECENT