Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / حیدرآباد شہر میں سرراہ شراب کی دکانات عوام کے لیے تکلیف کا باعث

حیدرآباد شہر میں سرراہ شراب کی دکانات عوام کے لیے تکلیف کا باعث

سپریم کورٹ کی ہدایت و قانون پر عمل کی ضرورت ، قانون کی کھلے عام خلاف ورزی ، حادثات میں اضافہ
حیدرآباد۔14اپریل (سیاست نیوز) شراب کی دکانات شہر کیلئے انتہائی تکلیف کا سبب ہیں شاہراہوں پر شراب کی دکانات کے متعلق سپریم کورٹ کے احکامات کے بعد شہری علاقوں میں بھی شراب کی دکانات کے متعلق قوانین کی پابندی کو یقینی بنانے کی ضرورت ہے کیونکہ شہری علاقو ںمیں شراب کی دکانوں پر دیکھی جانے والی ہنگامہ آرائی اور شراب کی دکانات سے متصل پرمٹ روم میں شراب نوشی کرنے کے بعدسڑک پر نکلنے والے نشہ کے عادی افراد حادثات کا سبب بنتے ہیں لیکن اس بات پر توجہ نہیں دی جا رہی ہے علاوہ ازیں شراب کی دکانات کے اطراف قانون کی دھجیاں اڑائی جاتی ہیں جس پر کنٹرول کرنے والا کوئی نہیں ہوتا جس کے سبب راہگیروں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد اور ٹریفک پولیس کی جانب سے پارکنگ نہ رکھنے والے تجارتی مراکز کے خلاف کاروائی کی جاتی ہے لیکن ان شراب کی دکانات کو نظر انداز کردیا جاتا ہے جہاں کئی گاڑیاں بے ہنگم پارک کردی جاتی ہیں جس کے سبب راہگیروں کو مشکلات پیش ٓاتی ہیں اور ان مسائل کے سبب شراب کی دکانات کے قریب جھگڑے ہونے لگتے ہیں ۔ دونوں شہروں میں موجود کئی شراب کی دکانات ایسی ہیں جن کے مالکین نے پارکنگ کی نشاندہی نہیں کی ہے لیکن اس کے باوجود انہیں اجازت نامہ دیئے جانے کے سبب مسائل پیدا ہونے لگے ہیں اور شہر کے کئی مقامات پر شراب کی دکانات کے سامنے کی جانے والی بے ہنگم پارکنگ کے سبب ٹریفک میں خلل پیدا ہو رہا ہے اور اس مسئلہ سے سب واقف ہونے کے باوجود عہدیداروں کی خاموشی کی مختلف وجوہات ہیں جن میں سب سے اہم وجہ یہ بتائی جاتی ہے کہ بیشتر شراب کی دکانات شہر کے سرکردہ سیاستدانوں کی ہیں یا پھر سیاستدانوں کے قریبی رشتہ دار یہ دکانات چلاتے ہیں ۔محکمہ ٹریفک پولیس سڑکوں پر جابجا راہگیروں کو روک کر نشہ کی حالت میں گاڑی چلانے والوں کی جانچ کے ساتھ اگر شراب کی دکانات کے پرمٹ روم میں شراب نوشی کے بعد نکلنے والوں کو پکڑنے لگ جائے تو اس سے کئی زیادہ افراد گرفت میں آسکتے ہیں جو شہرمیں نشہ کی حالت میں گاڑیاں چلاتے ہیں کیونکہ شراب کی دکان کے روبرو گاڑی کھڑی کرتے ہوئے دکان سے متصل پرمٹ روم میں شراب نوشی کے بعد کئی افراد اپنی ٹو وہیلر لیکر نکل پڑتے ہیں جو اہم سڑکوں پر حادثات کا سبب بھی بنتے ہیں۔ جی ایچ ایم سی ‘ محکمہ آبکاری اور محکمہ ٹریفک پولیس کی جانب سے شراب کی دکانات کے روبرو کی جانے والی بے ہنگم پارکنگ اور نشہ کی حالت میں گاڑی چلانے سے روکنے کے اقدامات کئے جاتے ہیں تو ایسی صورت میں عوام اور راہگیروں کو کافی راحت حاصل ہوگی۔ لکڑی کا پل کے قریب واقع ایک شراب کی دکان کے قرب کی جانے والی پارکنگ اور اطراف کے گلی کوچہ میں فروغ پارہے شراب نوشی کے اڈے راہگیروں کے علاوہ مقامی عوام کیلئے تکلیف کا سبب بنتے جا رہے ہیں اور اس شراب کی دکان کے روبرو کی جانے والی سڑک پر پارکنگ کے سبب اس اہم سڑک پر ٹریفک میں خلل پیدا ہونے لگا ہے۔جی ایچ ایم سی اور محکمہ ٹریفک پولیس کی جانب سے اگر ان شراب کی دکانات کے خلاف کاروائی کا آغاز کیا جائے جن کے پاس پارکنگ کی سہولت نہیں ہے تو ایسی صورت میں شہر کے مختلف مقامات پر موجود 50فیصد سے زیادہ شراب کی دکانات کو مہر بند کرنا پڑ سکتا ہے اسی لئے جی ایچ ایم سی کو چاہئے کہ وہ دیگر تجارتی اداروں کو ہراساں کرنے کے بجائے ان شراب کی دکانات کے خلاف کاروائی کرنے میں عجلت کا مظاہرہ کرے جو پارکنگ کی سہولت کے بغیر دکانات چلا رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT