Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / حیدرآباد میٹرو ٹرین میں مزید 100 کیلومیٹر توسیع کا منصوبہ

حیدرآباد میٹرو ٹرین میں مزید 100 کیلومیٹر توسیع کا منصوبہ

جاپان بنک سے 10 ہزار کروڑ روپئے قرض حاصل کرنے کی مساعی ‘ جاپانی حکام کا جلد دورہ متوقع
٭ پہلے مرحلے میں 19 کیلومیٹر تک ٹرین چلانے کی تیاریاں مکمل
٭ 57 میٹرو ٹرین میاںپور اور اُپل میٹرو ڈپو پہنچ چکی
٭ 65 کے منجملہ 45 اسٹیشنس تیار

 

حیدرآباد ۔ 8 اگسٹ ۔ ( سیاست نیوز) گریٹر حیدرآباد میں مزید 100 کیلومیٹر میٹرو ٹرین کی توسیع کیلئے حکومت کی جانب سے تیاریاں کی جارہی ہیں ۔ جاپان سے 10 ہزار کروڑ روپئے قرض حاصل کرنے کی مشاورت جاری ہے اور جاپان بنک کے نمائندوں کادورہ حیدرآباد کے بعد قطعی فیصلہ ہونے کی اُمید کی جارہی ہے ۔ 6 ماہ قبل چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر نے میٹرو ٹرین کی تعمیری کاموں کا جائزہ لیتے ہوئے اس کو انٹرنیشنل ایرپورٹ شمس آباد کے علاوہ دوسرے علاقوں تک توسیع دینے حکومت کو رپورٹ پیش کرنے کی عہدیداروں کو ہدایت دی تھی ۔ جس کے بعد سے میٹرو ٹرین کے دوسرے مرحلے پر عہدیداروں نے کام کرنا شروع کردیا ہے ۔ باوثوق ذرائع سے پتہ چلا ہے کہ جاپان انٹرنیشنل کوآپریشن ایجنسی ( جیکا) نے 100 کیلومیٹر میٹرو ٹرین کے دوسرے مرحلے کیلئے قرض دینے سے اُصولی طورپر اتفاق کیا ہے ۔ حال میں جاپان کا دورہ کرنے والے اعلیٰ عہدیداروں کے وفد نے جیکا بنک عہدیداروں سے ملاقات کرکے میٹرو ٹرین کے دوسرے مرحلے کی رپورٹ پیش کی ہے ۔ اس پراجکٹ پر کتنا قرض دیا جاسکتا ہے اس کا جائزہ لینے جیکابنک کے عہدیداروں کا ایک وفد جلد حیدرآباد کا دورہ کریگا جس کے بعد میٹرو ٹرین کی توسیع سے متعلق تصویر صاف ہوجانے کا امکان ہے۔ فی الحال ناگول تا رائے درگم ۔ ایل بی نگر تا میاں پور ۔ جے بی ایس تا فلک نما جملہ 72 کیلومیٹر تک میٹرو ٹرین چلانے کے کام انجام دیئے جارہے ہیں جو تقریباً 85 فیصد مکمل ہوچکے ہیں۔ 2018 ء تک تمام پراجکٹ کو مکمل کرنے کیلئے ایل اینڈ ٹی اور ایچ ایم او عہدیداروں کی جانب سے تیاریاں کی جارہی ہیں۔ دوسرے مرحلے کیلئے حکام کی جانب سے جو تجاویز تیار کی جارہی ہے ان میں تبدیلیوں کی بھی گنجائش رکھی گئی ہے ۔ پہلے مرحلے کے کاموں میں تاحال ناگول تا میٹوگوڑہ (8 کیلومیٹر ) میاں پور تا ایس آر نگر (11 کیلومیٹر ) میٹرو ٹرین آغاز کیلئے تیار ہے ۔ ان راستوں پر میٹرو ٹرین چلانے کی کمشنر آف ریلوے سیفٹی نے منظوری دیدی ۔ حکومت کی جانب سے بار بار پہلے مرحلے کی میٹرو ٹرین شروع کرنے کا اعلان کیا گیا ہے تاہم قطعی تاریخ کا تعین نہیں ہوسکا ہے۔ تین کاریڈور میں میٹرو ٹرین کا آغاز کرنے 57 ٹرینیں میاںپور ، اُپل میٹرو ڈپو میں تیار ہیں ۔ منجملہ 65 کے 45 اسٹیشنس کی تعمیرات تقریباً مکمل ہوچکی ہیں۔ ماباقی کام تیزی سے جاری ہے ۔ باوثوق ذرائع سے پتہ چلا کہ میٹرو ٹرین کے دوسرے مرحلے کیلئے حکام نے جو رپورٹ و تخمینہ تیار کیا ہے اُس میں 10 ہزار کروڑ کے مصارف کااندازہ لگایا گیا ہے ہر ایک کیلومیٹر پر 100 کروڑ کا تعمیری خرچ ہونے کی اُمید کی جارہی ہے ۔ اس لحاظ سے 100 کیلومیٹر کے دوسرے مرحلے پر 10 ہزار کروڑ روپئے خرچ ہونے کا تخمینہ ہے ۔ اتنی بھاری رقم جاپان کا بنک بطور قرض ادا کریگا کیا ابھی اس کی وضاحت نہیں ہوئی ہے لیکن ماضی میں آوٹر رنگ روڈ اور حسین ساگر کی صفائی کیلئے جاپان کے جیکا بنک نے مالی امداد کی تھی ۔ اگر جاپان بنک کی جانب سے قرض دینے سے اتفاق کیا جاتا ہے تو ریاست کے محکمہ فینانس کی جانب سے اس کو ضمانت دینی پڑے گی ۔

TOPPOPULARRECENT