Friday , August 18 2017
Home / شہر کی خبریں / حیدرآباد میں آئی ایس کے 8 ارکان کیخلاف چارج شیٹ

حیدرآباد میں آئی ایس کے 8 ارکان کیخلاف چارج شیٹ

سربراہ ٔتنظیم ابراہیم یزدانی کے ذاکر نائیک سے متاثر ہونے کا دعویٰ : این آئی اے
حیدرآباد۔ 22 ڈسمبر (سیاست نیوز) حیدرآباد آئی ایس آئی ایس موڈیول کا پتہ چلانے کے 6 ماہ بعد نیشنل انوسٹی گیشن ایجنسی (این آئی اے) نے 8 ارکان بشمول آئی ایس لیڈر محمد ابراہیم یزدانی کے خلاف چارج شیٹ پیش کی ہے۔ یہ موڈیول وی وی آئی پیز، مذہبی مقامات، پُرہجوم مارکٹس، سرکاری عمارتوں بشمول پولیس اسٹیشنس کو بڑے پیمانے پر نشانہ بنانے کا منصوبہ رکھتا تھا۔ اس مقصد کیلئے کئی کلو دھماکو مادہ بھی جمع کرلیا گیا تھا۔ تنظیم کے لیڈر ابراہیم یزدانی کا ہندوستان میں آئی ایس میں بھرتی کرنے والے شفیع ارمار کے ساتھ مسلسل ربط تھا۔ بتایا جاتا ہے کہ ابراہیم یزدانی ،ذاکر نائیک سے متاثر تھا اور آئی آر ایف کیمپ میں بحیثیت والینٹر شرکت کیلئے ممبئی جاچکا ہے۔ یزدانی نے 2010ء میں آئی آر ایف کیمپ میں حصہ لیا اور 2004ء سے ہی ذاکر نائیک کی تقاریر سنتا آرہا تھا۔ تنظیم کے دیگر ارکان بھی آئی ایس آئی ایس کے آن لائن ویڈیو اور بیانات بالخصوص انورعولقی، عبدالسمیع قاسمی، معراج ربانی، توصیف الرحمن، جرجیس انصاری اور ذاکر نائیک سے متاثر تھے۔ این آئی اے چارج شیٹ میں کہا گیا ہے کہ موڈیول کے ارکان نے آئی ایس آئی ایس کے تشہیری ویڈیوز اور ان کے میگزین ’’دابق‘‘ ڈاؤن لوڈ کیا تھا جس میں یہ بتایا گیا کہ آئی ایس سنی مسلمانوں کے حقوق کیلئے جدوجہد کررہی ہے۔ چارج شیٹ کے مطابق اس گروپ کا تعلق آئی ایس آئی ایس سے تھا اور اس نے خود ساختہ خلیفہ ابوبکر البغدادی کی تائید کی۔ اس کے علاوہ یہاں ایک گروپ تشکیل دیا گیا جسے ’’جنودالخلافہ فی البلادالہند‘‘ کا نام دیا گیا ۔ ان ارکان نے اپنی بیعت سے شفیع ارمار بذریعہ ای۔میل مطلع بھی کیا جو شام میں ہیں۔ چارج شیٹ میں جو نام دیئے گئے ہیں ، ان میں ابراہیم یزدانی ، ان کے بھائی الیاس یزدانی ، عبداللہ بن احمد العمودی عرف فہد ، حبیب محمد ، مظفر حسین رضوان ، یاسر نعمت اللہ ، محمد عطا اللہ رحمن اور عبدالرؤف شامل ہیں۔ حکام نے دعویٰ کیا ہے کہ اس تنظیم (موڈیول) کو بے نقاب کرنے سے ایک بڑا خطرہ ٹل گیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT