Wednesday , August 23 2017
Home / Top Stories / حیدرآباد میں تیز ہواؤں کیساتھ بارش ،موسم خوشگوار

حیدرآباد میں تیز ہواؤں کیساتھ بارش ،موسم خوشگوار

عوام کوجھلسا دینے والی گرمی سے راحت،مزید بوندا باندی کا امکان
حیدرآباد 17 اپریل (سیاست نیوز) شہر حیدرآباد میں گزشتہ ایک ہفتہ سے جاری شدید گرمی سے آج عوام کو اُس وقت زبردست راحت حاصل ہوئی جب سہ پہر اچانک موسم خوشگوار ہوگیا اور کئی مقامات پر ہلکی اور تیز بارش ہوئی۔ محکمہ موسمیات کی پیش قیاسیوں کے برعکس ہوئی اِس اچانک بارش کے سبب درجہ حرارت میں زبردست گراوٹ ریکارڈ کی گئی اور ہلکی اور تیز بارش کے ساتھ درجہ حرارت 35 ڈگری تک پہونچ گیا۔ آج دوپہر میں درجہ حرارت میں اضافہ ریکارڈ کیا گیا تھا اور 12 سے 2 بجے دن کے درمیان شہر حیدرآباد کے علاوہ نواحی علاقوں میں درجہ حرارت کے 44 تک پہونچ گیا تھا لیکن اندرون دو گھنٹے اچانک موسم خوشگوار ہونے اور ہلکی اور تیز بارش سے شہریوں کو زبردست راحت ملی۔ شہر میں مختلف مقامات بالخصوص عابڈس، بشیر باغ، حمایت نگر، شاہ علی بنڈہ، چارمینار، رامنتاپور، عنبرپیٹ، نامپلی، لکڑی کا پُل، خیریت آباد پر اچانک ہوئی بارش سے کچھ دیر کے لئے ٹریفک جام ہوگئی۔ تفریحی مقامات پر بچوں کو بارش میں کھیلتے ہوئے دیکھا گیا۔ گزشتہ ایک ہفتہ سے شہر میں 41 تا 43 ڈگری درجہ حرارت کے سبب شدید گرمی کی لہر دیکھی جارہی تھی اور محکمہ موسمیات نے آئندہ چند یوم تک گرم ہواؤں کے جاری رہنے کے خدشات ظاہر کئے تھے لیکن آج ہوئی بارش نے عوام کو جو راحت پہنچائی ہے اُس سے ایسا محسوس ہوتا ہے کہ شدید گرمی سے پریشان عوام کی جانب سے کی جانے والی دعاؤں کے سبب بارانِ رحمت کا نزول ہوا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ آئندہ 12 گھنٹوں کے دوران بھی شہر میں موسم اسی طرح خوشگوار رہے گا اور ہلکی بوندا باندی کے علاوہ پھوار جاری رہنے کا امکان ہے۔ رات کے وقت درجہ حرارت میں مزید گراوٹ کا امکان ظاہر کیا جارہا ہے جبکہ آئندہ دو یوم کے بعد ایک مرتبہ پھر درجہ حرارت 43 تا 44 پہونچ جانے کا اندیشہ ہے۔ حیدرآباد کے کئی علاقوں میں بارش کے فوری بعد موسم میں آئی تبدیلی کے سبب سیاحتی مقامات پر عوام کے ہجوم میں اضافہ دیکھا گیا۔ 18 اپریل کی علی الصبح درجہ حرارت 28 تا 29 ڈگری تک پہونچ جانے کی توقع ہے جبکہ 18 اپریل کو دوپہر میں درجہ حرارت 40 تک رہنے کا امکان ظاہر کیا جارہا ہے۔ شدید گرمی کے بعد ہوئی اچانک بارش کے سبب رطوبت میں کچھ حد تک اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔ شہر میں طوفانی ہواؤں کے ساتھ بارش کے بعد کئی علاقوں میں برقی مسدود ہوگئی۔ مختلف محلوں میں شکایات موصول ہوئیں۔ کئی گھنٹوں تک برقی سربراہی بحال نہیں کی گئی۔ بعض مقامات پر ہورڈنگس گرنے کی بھی اطلاع ہے۔ عمارتوں کی تعمیر کے سلسلہ میں باندھے گئے پردے اور لکڑیاں بھی اُڑ گئے۔ رات دیر گئے بھی شہر کے بعض علاقوں میں بوندا باندی جاری رہی۔ تلنگانہ میں گرمی کی شدید لہر جاری ہے ۔ حیدرآباد میں 14 اپریل کو سب سے زیادہ درجہ حرارت 44 ریکارڈ کیا گیا تھا۔ 43 سال کے بعد پہلی مرتبہ اس قدر اعظم ترین درجہ حرارت ریکارڈ کیا گیا۔ اتوار کی شام بارش کے باعث درجہ حرارت میں قدرے کمی آئی۔ حیدرآباد میں آج شام موسم ابر آلود رہا اور ٹھنڈی ہوائیں بھی چلیں۔ عوام نے اس خوشگوار موسم پر تبصرہ کرتے ہوئے ٹوئٹر کے ذریعہ اپنے دوست احباب کو تصاویر کے ساتھ دلچسپ پیامات روانہ کئے۔ ’’یہ موسم کی پہلی بارش تھی، تن پانی میں، من یادوں میں گم ہوگیا‘‘۔ اتوار کی تعطیل کا لطف دوبالا کرتے ہوئے آئی ٹی شعبہ سے وابستہ نوجوانوں نے اپنے احساسات کے اظہار کیلئے ٹوئٹر اور واٹس ایپ کا بھرپور استفادہ کیا: ’’آج تفصیل نہیں بس اتنا سنو موسم حسین ہے لیکن تم جیسا نہیں‘‘۔ ایک شہری نے اوپل سے واٹس ایپ پر بتایا کہ حیدرآباد میں طویل وقفہ کے بعد ٹھنڈا موسم محسوس کیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT