Sunday , August 20 2017
Home / شہر کی خبریں / حیدرآباد میں سعودی قونصل خانہ کا قیام اور حج کوٹہ میں اضافہ کا تیقن

حیدرآباد میں سعودی قونصل خانہ کا قیام اور حج کوٹہ میں اضافہ کا تیقن

وزیر خارجہ سشما سوراج سے ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی کی نمائندگی

 

حیدرآباد۔/3ڈسمبر،( سیاست نیوز) وزیر خارجہ سشما سوراج نے حیدرآباد میں سعودی کونسلیٹ کے قیام اور تلنگانہ کیلئے حج کوٹہ میں اضافہ کے اقدامات کا تیقن دیا۔ ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے آج نئی دہلی میں سشما سوراج سے ملاقات کی اور اس سلسلہ میں ایک یادداشت پیش کی۔ اس موقع پر ریاستی وزراء ای راجندر، پوچارم سرینواس ریڈی، رکن پارلیمنٹ جتیندر ریڈی اور دہلی میں تلنگانہ کے نمائندے وینو گوپال چاری موجود تھے۔ محمود علی نے سشما سوراج کو پیش کردہ یادداشت میں حیدرآباد میں سعودی کونسلیٹ کے قیام کی ضرورت اور افادیت سے واقف کرایا۔ انہوں نے کہا کہ ہر سال تلنگانہ سے ہزاروں افراد حج اور عمرہ کیلئے روانہ ہوتے ہیں اور انہیں ویزا کیلئے ایجنٹس کی خدمات حاصل کرنی پڑ رہی ہیں، اگر حیدرآباد میں سعودی کونسلیٹ کی اجازت دی گئی تو عوام کو راحت ملے گی اور خطیر رقم کی بچت ہوپائے گی۔ انہوں نے کہا کہ سعودی سفیر نے حیدرآباد میں کونسلیٹ کے قیام سے اصولی طور پر اتفاق کرلیا ہے اور انہیں وزارت خارجہ کی منظوری کا انتظار ہے۔ تلنگانہ حکومت سعودی کونسلیٹ کے قیام کیلئے نہ صرف اراضی فراہم کرے گی بلکہ دیگر بنیادی سہولتیں بھی فراہم کی جائیں گی۔ وزیر خارجہ نے اس مسئلہ پر ہمدردانہ غور کا تیقن دیا۔ محمود علی نے حج 2016کیلئے حج کوٹہ میں اضافہ کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ حج کوٹہ کے الاٹمنٹ میں 2011مردم شماری کو پیش نظر رکھا جائے۔ سابق میں 2001مردم شماری  کے اعتبار سے تلنگانہ کو حج کوٹہ الاٹ کیا گیا تھا جس سے ہزاروں درخواست گذاروں کو مایوسی کا سامنا کرنا پڑا۔ انہوں نے کہا کہ نئی ریاست تلنگانہ کو حج کوٹہ میں خصوصی اضافہ پر ہمدردانہ غور کیا جانا چاہیئے۔ سشما سوراج نے اس سلسلہ میں وزارت خارجہ اور سنٹرل حج کمیٹی سے مشاورت کا تیقن دیا۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے بتایا کہ تلنگانہ حکومت نے مکہ مکرمہ میں واقع نظام رباط میں گزشتہ حج کے موقع پر 597 حجاج کرام کیلئے مفت قیام اور طعام کا انتظام کیا تھا جبکہ 2016 میں ایک ہزار افراد کے قیام کا منصوبہ ہے۔ انہوں نے تلنگانہ حج کمیٹی کی جانب سے آندھرا پردیش کے حجاج کرام کیلئے خدمات انجام دینے کی تفصیلات پیش کی۔ کرناٹک کے تقریباً 600 عازمین حج بھی حیدرآباد سے ہی روانہ ہوئے تھے۔ حج 2016 کیلئے تلنگانہ حکومت کو آندھرا پردیش کے عازمین حج کیلئے انتظامات کرنے ہوں گے کیونکہ آندھرا پردیش میں ابھی تک انٹرنیشنل ایرپورٹ قائم نہیں ہوا ہے۔

TOPPOPULARRECENT