Sunday , October 22 2017
Home / شہر کی خبریں / حیدرآباد کیلئے زیادہ مالی امداد کی خواہش

حیدرآباد کیلئے زیادہ مالی امداد کی خواہش

حیدرآباد ۔ 17 ڈسمبر (سیاست نیوز) چیف منسٹر تلنگانہ مسٹر کے چندرشیکھر راؤ نے مرکزی وزیر شہری ترقیات مسٹر ایم وینکیا نائیڈو کے نام سے ایک مکتوب تحریر کیا ہے اور اس میں تیز رفتاری کے ساتھ ترقی پانے والے شہر حیدرآباد میں بنیادی سہولتوں کی فراہمی کیلئے مرکزی حکومت سے مالی امداد فراہم کرنے کی خواہش کی۔ باوثوق سرکاری ذرائع نے یہ بات بتائی اور کہا کہ شہر حیدرآباد میں صرف 100 کروڑ روپیوں کے مصارف سے ہی کوئی مناسب سہولتوں کی فراہمی ہرگز ممکن نہیں ہے۔ انہوں نے اپنے مکتوب میں کہا کہ سالانہ 5,500 کروڑ روپئے بجٹ کے حامل گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کیلئے سالانہ صرف 100 کروڑ روپئے دیئے جانے پر کوئی بھی کام مکمل نہیں ہوپائیں گے۔ لہٰذا شہر حیدرآباد کی ضروریات کو پیش نظر رکھتے ہوئے زیادہ سے زیادہ رقومات منظور کرنے کی مرکزی وزیر شہری ترقیات مسٹر ایم وینکیا نائیڈو پر زور دیا اور اس بات کی اپیل کی کہ خصوصی طور پر شہر حیدرآباد کو ترجیحی بنیاد پر رقومات فراہم کریں۔ انہوں نے مزید بتایا کہ 625 مربع کیلو میٹر کے احاطہ پر پائے جانے والے شہر حیدرآباد کو (A-1) اے ون زمرہ کا درجہ حاصل ہے اور حیدرآباد کے بجائے کریم نگر کو اسمارٹ سٹی کی حیثیت سے منتخب کرنے کی خواہش کی، جس سے کریم نگر شہر کو منصوبہ بند انداز میں ترقی ہر لحاظ سے ممکن ہوسکے گی۔ چیف منسٹر کے چندرشیکھر راؤ نے حیدرآباد مہانگر سربراہی آب اسکیم، ڈرینج، ٹرانسپورٹ و دیگر شعبہ جات کی ترقی کیلئے خصوصی حکمت عملی مرتب کرکے مؤثر روبہ عمل لانے کے اقدامات کئے جانے چاہئے۔

TOPPOPULARRECENT