Tuesday , May 23 2017
Home / شہر کی خبریں / حیدرآباد کے چھ تاریخی عمارتوں کو ہریٹیج ایوارڈس

حیدرآباد کے چھ تاریخی عمارتوں کو ہریٹیج ایوارڈس

انٹک کی ایوارڈ تقریب ، خانقاہ درگاہ حضرت شاہ خاموشؒ کو ایوارڈ ، ایس ستیہ نارائنا و سجاد شاہد کا خطاب
حیدرآباد ۔ 19۔ اپریل (سیاست نیوز) انڈین نیشنل ٹرسٹ فار آل ان کلچرل ہیریٹیج (INTACH) کی جانب سے حیدرآباد کی 6 تاریخی عمارتوں کو ایوارڈس پیش کئے گئے۔ ورلڈ ہیریٹیج ڈے کے موقع پر اس سلسلہ میں ایک تقریب منعقد ہوئی جس میں آر ٹی سی کے صدرنشین ایس ست نارائنا اور انٹاک کے کنوینر سجاد شاہد نے یہ ایوارڈ پیش کئے۔ جن 6 اداروں کو تاریخی ورثہ کے تحفظ کیلئے ایوارڈ دیا گیا ، ان میں خانقاہ درگاہ حضرت شاہ خاموشؒ شامل ہے جو تاریخی مکہ مسجد کے متصل واقع ہے۔ اس خانقاہ میں حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم اور حضرت علیؓ کے آثار مبارک موجود ہیں۔ مولانا سید اکبر نظام الدین حسینی صابری سجادہ نشین درگاہ حضرت شاہ خاموشؒ نے یہ ایوارڈ حاصل کیا۔ انٹاک کی جانب سے گزشتہ 22 برسوں سے یہ ایوارڈ پیش کئے جارہے ہیں۔ ای ایم ای وار میموریل سکندرآباد کے علاوہ کارٹیج انڈسٹریز سیلز ڈپو گن فاؤنڈری، رویندرا بھارتی سنٹرل لائبریری عثمانیہ یونیورسٹی اور مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی کو بھی یہ ایوارڈ پیش کئے گئے۔ ایوارڈ کے انتخاب کیلئے ناصر قریشی اور سابق صدرنشین نظام ٹرسٹ شاہد حسین پر مشتمل دو رکنی جیوری تشکیل دی گئی تھی۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سجاد شاہد نے تاریخی عمارتوں کے تحفظ کے سلسلہ میں حکومت کے تعاون کو ناگزیر قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ متحدہ آندھراپردیش میں انٹاک کی آواز پر حکومت نے توجہ نہیں دی تھی ۔ آر ٹی سی کے صدرنشین ایس ست نارائنا نے بتایا کہ تلنگانہ حکومت نے اسٹیٹ ہیرٹیج ایکٹ کو منظوری دی ہے تاکہ ریاست کی تمام تاریخی عمارتوں کا تحفظ کیا جاسکے۔ اسمبلی کے حالیہ اجلاس میں اس بل کو منظوری دی گئی۔ شریمتی انورادھا ریڈی نے بتایا کہ اقوام متحدہ نے جاریہ سال سیاحت کی ترقی کا سال قرار دیا ہے اور اسی کے پیش نظر ایوارڈس کا انتخاب عمل میں آیا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT