Saturday , July 22 2017
Home / شہر کی خبریں / حیدرآباد میں جائیداد ٹیکس بقایاجات کی حوصلہ افزاء وصولی

حیدرآباد میں جائیداد ٹیکس بقایاجات کی حوصلہ افزاء وصولی

عہدیداروں کی محنت اور شہریوں میں شعور بیداری جی ایچ ایم سی کیلئے فائدہ مند
حیدرآباد۔9اپریل (سیاست نیوز) مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد نے جائیداد ٹیکس کی وصولی کیلئے متاثر کن پیشکش اور عوامی شعور بیداری کے ذریعہ ٹیکس بقایاجات کی وصولی میں بڑی حد تک کامیابی حاصل کی ہے۔ کمشنر جی ایچ ایم سی ڈاکٹر بی جناردھن ریڈی کے بموجب سال گذشتہ یکم تا 8اپریل 2016کے دوران 2کروڑ 32لاکھ روپئے بطور جائیداد ٹیکس وصول کئے گئے تھے لیکن جاریہ سال جی ایچ ایم سی نے early birdآفر کے ذریعہ شہریوں کو جائیداد ٹیکس کی بروقت ادائیگی کی جانب راغب کیا ہے اور اس منصوبہ نے جی ایچ ایم سی کو کافی فائیدہ پہنچایا ہے۔ جاریہ مالی سال کے آغاز کے ساتھ ہی جی ایچ ایم سی نے جو پیشکش کی تھی اس کے سبب یکم اپریل تا 8اپریل 2017 کے دوران 20کروڑ 52لاکھ روپئے وصول کئے گئے جو کہ ایک بہترین نشانہ ہے اورا س نشانہ کے حصول کیلئے بلدیہ کو صرف 8دن لگے ہیں جو کہ نہ صرف بلدیہ کی جانب سے کی گئی پیشکش کا نتیجہ ہے بلکہ عہدیداروں کی محنت اور شہریو ںمیں شعور اجاگر ہونے کا نتیجہ ہے۔ کمشنر جی ایچ ایم سی کے مطابق شہریو ںکی جانب سے مالی سال کے آغاز کے ساتھ ہی جائیداد ٹیکس کی ادائیگی کے رجحان میں اضافہ ہوتا ہے تو ایسی صورت میں شہر میں جاری ترقیاتی کاموں میں بھی تیزی لائی جا سکتی ہے اور دیگر ترقیاتی کا موں کی منصوبہ بندی کی جا سکتی ہے اسی لئے شہریوں کو جائیدادٹیکس کی ادائیگی میں سستی کے بجائے عجلت کی جاتی ہے تو ایسی صورت میں ان کی تیز رفتار ترقی ہوتی جائے گی ۔ڈاکٹر بی جناردھن ریڈی نے بتایا کہ جی ایچ ایم سی حدود میں تمام سرکلس کا عملہ جائیداد ٹیکس کی وصولی کو ممکن بنانے کی کوشش کررہاہے اور بلدی عہدیداروں کے عوام کے درمیان پہنچنے اوربقایاجات کی عدم ادائیگی کی جانب توجہ مبذول کروائے جانے پر مالکین جائیداد اپنی جائیدادوں کا ٹیکس اداکرنے تیار ہیں ۔ انہوں نے بتایا کہ ٹیکس بقایاجات کی وصولی کیلئے مہم میں شدت پیدا کرتے ہوئے طویل مدتی بقایاجات کی وصولی کو ممکن بنانے کے اقدامات کئے جارہے ہیں اور توقع ہے کہ اس سلسلہ میں مزید سخت فیصلے کئے جائیں گے تاکہ طویل مدتی بقایاجات کی وصولی کو ممکن بنایا جاسکے۔ جی ایچ ایم سی نے تین سال سے زائد مدت سے جائیداد ٹیکس ادا نہ کرنے والے مالکین جائیداد کے نام بیانرس پر معہ پتہ تحریر کرتے ہوئے ان ہی کے علاقوں میں واجب الادا رقومات کے ساتھ نصب کرنے کا فیصلہ کیا تھا لیکن اب کہا جا رہا ہے کہ جائیداد ٹیکس کی وصولی کیلئے جی ایچ ایم سی سوشل میڈیا کا استعمال کرے گی۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT