Sunday , August 20 2017
Home / Top Stories / ح3حیدرآبادی نوجوانوں کی ناگپور سے حیدرآباد منتقلی

ح3حیدرآبادی نوجوانوں کی ناگپور سے حیدرآباد منتقلی

داعش میں شمولیت کی کوشش کی تحقیقات کیلئے ایس آئی ٹی کو حوالگی
حیدرآباد ۔ /27 ڈسمبر (سیاست نیوز) داعش میں شمولیت کیلئے حیدرآباد سے کشمیر کیلئے روانہ ہونے والے تین نوجوان جنہیں ناگپور ایرپورٹ پر حراست میں لے لیا گیا تھا آج ریاستی انٹلیجنس عملہ نے انہیں حیدرآباد منتقل کردیا ۔ چندرائن گٹہ اور ہمایوں نگر پولیس اسٹیشنس میں نوجوانوں کی گمشدگی سے متعلق مقدمات کو حیدرآباد سنٹرل کرائم اسٹیشن کی اسپیشل انوسٹی گیشن ٹیم (ایس آئی ٹی) کے حوالے کردیا گیا ۔ باوثوق ذرائع نے بتایا کہ حراست میں لئے گئے نوجوانوں کے خلاف ایس آئی ٹی کی جانب سے ایک مقدمہ درج کیا جارہا ہے ۔ واضح رہے کہ چندرائن گٹہ گلشن اقبال کالونی ، نصیب نگر اور ہمایوں نگر علاقے سے تعلق رکھنے والے تین نوجوان عمر فاروق حسینی ، عبداللہ باسط اور معاذ حسن فاروقی اچانک لاپتہ ہونے کے سبب ان کے والدین نے متعلقہ پولیس اسٹیشن میں گمشدگی کا ایک مقدمہ درج کرایا تھا اور پولیس نے اس سلسلے میں تحقیقات کا آغاز کیا تھا لیکن اسی دوران مہاراشٹرا کی انسداد دہشت گردی اسکواڈ نے ریاستی انٹلیجنس عملہ کی مدد سے مذکورہ نوجوانوں کو اس وقت ناگپور ایرپورٹ پر حراست میں لے لیا جب وہ سرینگر کیلئے انڈیگو فلائیٹ میں سفر کرنے کی کوشش کررہے تھے ۔ باوثوق ذرائع نے بتایا کہ حراست میں لئے گئے دو نوجوانوں کو گزشتہ سال بھی داعش میں شمولیت کی کوشش کے دوران کولکتہ میں حراست میں لیکر انہیں حیدرآباد منتقل کیا گیا تھا اور بعد کونسلنگ انہیں رہا کردیا گیا ۔ ذرائع نے مزید بتایا کہ مذکورہ تین نوجوانوں نے تفتیش میں یہ انکشاف کیا ہے کہ وہ حیدرآباد تا ناگپور بذریعہ ٹیکسی سفر کیا اور ناگپور سے سرینگر کیلئے فلائیٹ میں سفر کرنے کے بعد وہ افغانستان پہونچنے کی کوشش کررہے تھے ۔

TOPPOPULARRECENT