Sunday , August 20 2017
Home / جرائم و حادثات / خاتون کلکٹر کیساتھ نازیبا سلوک ،رکن اسمبلی شنکر نائیک گرفتار،ضمانت پر رہائی

خاتون کلکٹر کیساتھ نازیبا سلوک ،رکن اسمبلی شنکر نائیک گرفتار،ضمانت پر رہائی

حیدرآباد۔13 جولائی (سیاست ڈاٹ کام)حکومت کے ہریتا ہارم پروگرام کے دوران خاتون کلکٹر کے ساتھ قابل اعتراض رویہ کے سلسلہ میں حکمران ٹی آر ایس کے محبوب آباد رکن اسمبلی شنکر نائک کو پولیس نے گرفتار کرلیا ۔ایس پی مسٹر کوٹی ریڈی نے بتایا کہ گزشتہ روز ہریتاہارم پروگرام کے دوران شنکر نائک نے کلکٹرکے ساتھ نازیبا سلوک اختیارکیا تھا۔ اس واقعہ کے سلسلہ میں کلکٹر سے موصولہ شکایت کے بعد رکن اسمبلی کے خلاف تعزیرات ہند کی دفعہ353،354اور 509کے تحت ایک مقدمہ درج کرلیا گیا تھا۔کلکٹر نے الزام لگایا تھا کہ شنکر نائک نے محبوب آباد میں واقع این ٹی آر اسٹیڈیم میں منعقدہ شجرکاری پروگرام کے دوران ان کا کاندھا پکڑا تھا۔انہیں جمعرات کی صبح گرفتار کرلیا گیا ۔بعد ازاں پولیس اسٹیشن طلب کرتے ہوئے ان سے پوچھ تاچھ کی گئی اور جانچ کے لئے آئندہ بھی حاضر ہونے کی ہدایت کے بعد پولیس اسٹیشن میں ان کی ضمانت منظور کرلی گئی اور ان کو رہا کردیا گیا۔ واضح رہے کہ اس واقعہ کے بعد چیف منسٹر کے چندرشیکھر راؤ نے ان پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کلکٹر سے غیر مشروط معذرت خواہی کرنے کی ہدایت دی تھی ۔ انہوں نے کہا تھا کہ خاتون کلکٹر سے نامناسب رویہ پر معافی نہ مانگنے پر شنکر نائیک کو پارٹی سے معطل کردیا جائے گا چنانچہ نائیک نے کیمپ آفس پہنچ کر شخصی طور پر کلکٹر سے معافی مانگی تھی ، اس کے باوجود کلکٹر نے پولیس میں ایف آئی آردرج کروائی تھی ۔چیف منسٹر نے ڈپٹی چیف منسٹر کڈیم سری ہری کو ہدایت دی تھی کہ وہ کلکٹر سے اس خصوص میں بات کریں ۔ کلکٹر نے چیف سکریٹری سے اس واقعہ کی شکایت کی تھی ۔مقامی ٹی وی چیانلس پر فوٹیج دکھائے گئے جس میں رکن اسمبلی شنکر نائیک مبینہ طور پر کلکٹر کا بازو پکڑ رہے ہیں۔ کسی بھی شخص کو اگر دفعہ 354 کے تحت قصوروار قرار دیا جائے تو اسے زیادہ سے زیادہ دو سال جیل یا جرمانہ یا پھر دونوں سزائیں ہوسکتی ہیں۔ کلکٹر نے اپنی شکایت میں کہا ہے کہ رکن اسمبلی کے نازیبا سلوک اور مبینہ طور پر ہاتھ لگانے سے انہیں بے حد تکلیف ہوئی۔ عہدیداروں نے بتایا کہ مزید تحقیقات جاری ہیں اور سی سی ٹی وی فوٹیج کے علاوہ دیگر کلپنگس کا بھی جائزہ لیا جارہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT