Wednesday , August 16 2017
Home / جرائم و حادثات / خاتون کو مسلسل 3 لڑکیاں جنم دینے پر ہراسانی

خاتون کو مسلسل 3 لڑکیاں جنم دینے پر ہراسانی

سسرالی رشتہ داروں کے طعنوں سے تنگ آکر خودکشی
حیدرآباد۔ 13 اپریل (سیاست نیوز) مزید جہیز کیلئے کا شکار خودکشی کرنے والی 4 ماہ 5 دن کی انجم فیضان کا واقعہ ابھی تازہ ہی تھا کہ پرانے شہر میں ایک اور دل دہلا دینے والا واقعہ پیش آیا جہاں لڑکیوں کی پیدائش سے شوہر کی ہراسانی کا شکار ایک خاتون نے خودسوزی کرلی۔ اس خاتون نے مسلسل تین لڑکیوں کو جنم دیا تھا۔ چھتری ناکہ پولیس اسٹیشن سے وابستہ سب انسپکٹر محمد تقی الدین کے مطابق 24 سالہ شہانہ بیگم نے 9 اپریل کو اپنے جسم پر کیروسین ڈال کر آگ لگالی اور علاج کے دوران آج وہ فوت ہوگئی۔ خاتون عثمانیہ جنرل ہاسپٹل میں زیرعلاج تھی۔ گزشتہ پانچ دن سے اس خاتون کا علاج جاری تھا جس نے پولیس کو دیئے گئے اپنے بیان میں خودسوزی کا ذکر کیا اور خاتون اپنی 6 ماہ کی لڑکی کے لئے جھلسی ہوئی حالت میں تڑپتی رہی۔ اس انتہائی اقدام کی اہم وجہ خاتون کو گھر سے نکال دینے کی دھمکی تھی۔ 6 ماہ قبل اپنی تیسری لڑکی کو جنم دینے کی بعد ہی سے اس کو شوہر کی ہراسانیوں اور اذیتوں کا سامنا تھا۔ اذیت رسانی کے باوجود وہ اپنی لڑکیوں کیلئے سب کچھ برداشت کرنے کو تیار ہوگئی لیکن 9 اپریل کو اس کا شوہر محمد عمر مکان پہنچ کر بدکلامی شروع کی اور شہانہ کو گھر سے چلے جانے کیلئے کہا اس بات سے دلبرداشتہ ہوکر اس نے انتہائی اقدام کیا۔

TOPPOPULARRECENT